single photo

ویجیٹیبل فیٹس سےبنی فروزن ڈیزرٹس ڈیری آئس کریم نہیں ہیں،بچوں کومت کھلائیں

لاہور(قدرت روزنامہ10اپریل2017) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے ایسی تمام کمپنیوں کیخلاف ایکشن لینے کافیصلہ کیا ہےجو ویجیٹیبل فیٹ سے تیار کردہ فروزن ڈیزرٹس کو ڈیری آئس کریم کےطورپرفروخت کررہی ہیں . پنجاب فوڈاتھارٹی کی طرف سے جاری کی گئی حالیہ وارننگ میں فروزن ڈیزرٹس کو ڈیری آئس کریم بناکربیچنےوالی کمپنیوں کومتنبہ کیاگیا ہے کہ ویجیٹیبل فیٹ سے بنی فروزن ڈیزرٹ کو ڈیری آئس کریم کے طور پر بیچنے کا سلسلہ بند کیا جائے .

ضرور پڑھیں: آئس کریم چاٹنے پر 20 سال قید کی سزا کا سامنا

ایک اشتہار کے ذریعے سب کو خبر دار کیا ہے کہ سستے ریٹس پر بکنے والی فروزن ڈیزرٹس کے گمراہ کن ٹی وی اور اخبار اشتہارات کے ساتھ ساتھ ڈبوں پر لگے لیبل درست کیے جائیں. 100 سے 120 روپے لیٹر بکنے والی فروزن ڈیزرٹس بچوں کی دماغی نشوونما کے لیے مضر ہیں.ان فروزن ڈیزرٹس میں ڈیری فیٹ کی جگہ ویجیٹیبل فیٹ استعمال کیا جاتا ہے جو بچوں کی دماغی اور جسمانی نشوونما کوروکتا ہے. اس حوالے سے ڈی جی فوڈ اتھارٹی نورالامین مینگل کا کہنا تھا کہ حالیہ جائزے کے مطابق 44فی صد بچوں میں نشوونماکی کمی کا شکار ہیں.بچوں کی نشوونما کے لیے ڈیری فیٹ ضروری ہیں تاہم ویجیٹیبل فیٹ ان کے لیے نقصان دہ ہے. اس لیے پہلے مرحلے میں تمام فروزن ڈیزرٹس کے لیبل پر وارننگ "یہ آئس کریم نہیں فروزن ڈیزرٹ ہے اور ویجیٹیبل فیٹ سے بنی ہے"درج کروا رہے ہیں . علاوہ ازیں تمام سٹیک ہولڈرز بشمول فروزن ڈیزرٹ بنانے والی کمپنیوں کو کہا گیا ہے کہ وہ ڈیری آئس کریم بھی متعارف کروائیں تاکہ بڑوں کے علاوہ بچے بھی ان کی مصنوعات سے کسی بھی خوف و خطرے کے بغیر لطف اندوز ہو سکیں.نورالامین مینگل نے کا اس سلسلے میں مزید کہنا تھا کہ والدین سے بھی گزارش ہے کہ وہ اپنے بچوں کو فروزن ڈیزرٹس کی بجائے ڈیری فیٹ سے بنی آئس کریم کھلائیں. دوسرے مرحلے میں ان تمام کمپنیوں کے خلاف ایکشن لیا جائے گا جن کے لیبل گمراہ کن اور اشتہارات مبہم پائے گئے...

ضرور پڑھیں: چمن اور گورمے بیکریوں کی آئس کریم مت کھائیں ورنہ آپ ان خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہوسکتے ہیں ، فوڈ اتھارٹی نے خبر دار کردیا

Top