’’8 جون کے بعد جو بھی برطانیہ میں داخل ہوگا اسے۔۔۔‘‘ برطانوی حکومت نے سخت ترین اعلان کردیا

لندن (قدرت روزنامہ)برطانیہ کی وزیرِ داخلہ پریتی پٹیل نے کہا ہے کہ برطانیہ کی سرحد پر نئے اقدامات لیے جا رہے ہیں تاکہ انفیکشن کی دوسری لہرکو روکا جا سکے . میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ 8 جون کے بعد جو بھی برطانیہ میں داخل ہو گا اسے 14 دن کے لیے سیلف آئسولیٹ ہونا ہو گا .

ضرور پڑھیں: کورونا وائرس کی ہلاکتوں کے سرکاری اعدادوشمار درست نہیں، اصل تعداد زیادہ ہے، برطانوی حکومت کا اعتراف

وزیرِ داخلہ نے کہا کہ خطرہ ہے کہ گرمیوں میں برطانیہ آنے والے اور بیرون ملک چھٹیاں گزار کر واپس آنے والے اپنے ساتھ وائرس کو بھی لے آئیں.انھوں نے کہا کہ برطانیہ میں انفیکشن ریٹ کم ہو رہا ہے اور یہ امپورٹڈ کیسز ایک بڑا خطرہ بن سکتے ہیں اور اس طرح ٹرانسمیشن کو روکنے کے لیے کارروائی کی ضرورت ہے.

انہوںنے کہاکہ جیسا کہ پہلے ہی کہا جا رہا تھا، ریپبلک آف آئرلینڈ، چینل آئی لینڈ اور آئل آف مین سے آنے والے اس قرنطینہ سے مستثنیٰ ہوں گے.اس کے علاوہ وائرس کا علاج کرنے والے میڈیکل پروفیشنلز اور سیزنل ایگریکلچرل ورکرز بھی مستثنیٰ ہیں جو اسی فارم پر رہیں گے جہاں وہ کام کرتے ہیں.

..

ضرور پڑھیں: 24 گھنٹو ں میں 260ہلاکتیں، حالات مزید خراب ہو گئے برطانوی حکومت نے 6 ماہ تک لاک ڈاؤن کا عندیہ د ے دیا


Top