آپ Anxiety کا شکار ہیں؟ خطرناک مسئلے کے آسان حل

اسلام آباد (قدرت روزنامہ)کیا آپ اپنی نئی ملازمت سے، شادی کرنے سے، آنے والے امتحان سے یا کسی بیماری کو لے کر یا مستقبل سے پریشان ہیں؟تو آپ اینزائٹی Anxiety کا شکار ہیں . اینزائٹی کو غیر یقینی کیفیت یا کچھ ناخوشگوار واقع ہونے کا ڈر کہا جا سکتا ہے .

اردو میں انزائٹی کے لیے بے چینی، پریشانی یا گھبراہٹ جیسی اصطلاحات استعمال ہوتی ہیں. گھبراہٹ یا بے چینی دراصل ہماری ذہنی کار کردگی اور ہمارے اندر چلنے والے نظام کی عکاسی کرتی ہے. ٹینشن، دباؤ یا پریشانی کو مصروف ترین زندگی سے الگ نہیں کیا جا سکتا. یہ وہ آؤٹ پٹ ہے جس کا ان پٹ ہماری سوچیں اور فکریں ہوتی ہیں. 2016 میں ایک جائزہ پبلش ہوا جس میں یہ بتایا گیا کہ دنیا میں سب سے بڑا مسئلہ ڈپریشن کی بجائے اینزائٹی ہے. اینزائٹی کو ہم لوگ جتنا ہلکا تصور کرتے ہیں یہ اتنی ہی خطرناک بیماری ہے. اس قسم کے وسوسے اور خوف انسانوں میں کیوں پیدا ہوتے ہیں. ماہرین نفسیات کے مطابق یہ ذہنی بیماری ہوتی ہے جسے کبھی ’Neurosis‘ کہا جاتا تھا. تاہم کچھ عرصہ سے اسے ’Anxiety‘ یا خوف واضطراب، ذہنی خلل یا بے چینی کا نام دیا جانے لگا ہے. اس بارے میں جرمن سوسائٹی فار سائیکیاٹری اینڈ سائیکو تھیراپی سے منسلک ماہرین نفسیات کی ایک کمیٹی نے مزید ریسرچ کی ہے.جرمن ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ ذہنی خلل بہت سی مختلف کیفیات میں ظاہر ہوتا ہے. بعض افراد ہمیشہ اداسی اور پژمُردگی کی کیفیت میں رہتے ہیں، جبکہ ان کے پاس نہ تو اداسی کی کوئی وجہ ہوتی ہے نہ ہی وہ کسی حقیقی صدمے کا شکار ہوتے ہیں. تب بھی وہ ہراساں رہتے ہیں اور ایسی فکر و پریشانیوں میں گہرے رہتے ہیں جن کا کوئی وجود یا وجہ نہیں ہوتی. جرمن سوسائٹی فار سائیکیاٹری اینڈ سائیکو تھراپی کی کمیٹی کی ایک رکن سابینے ہرپرٹس کا کہنا ہے کہ خوف اور اندیشے کی یہ کیفیت ایک ذہنی بیماری ہے. اس کے شکار مریضوں کو بس یہ محسوس ہوتا رہتا ہے کہ اُن کے ساتھ کوئی غیر معمولی بات ہے تاہم وہ یہ نہیں سمجھ سکتے کہ یہ دراصل ان کا ایک دماغی خلل ہے. اس کے علاوہ، کچھ لوگ قدرتی طور پر دوسروں کے مقابلے میں زیادہ اینزائٹی کا شکار ہوتے ہیں . اگر آپ پریشانی اور مسلسل تشویش سے متاثر ہو رہے ہیں تو، آپ کو بے چینی سے بچنے کی ضرورت ہے اور طبی مدد طلب کرنے کی ضرورت ہے. اینزائٹی میں مردوں کی مقابلہ میں خواتین کی تعداد زیادہ بڑھتی ہے. اینزائٹی کی کچھ علامات خوف، تشویش، سر درد، چڑچڑا پن ، سانس کی قلت، مشکل سے سونا یا ہر وقت سوتے رہنا، پیٹ میں درد، خشک منہ، متلی، چکر، کسی کام میں مشکل سے توجہ لانا اور تھکاوٹ ،ہیں. اس مسئلہ کے دیگر عوامل میں ڈپریشن، نیند میں پریشانی، غذائیت کی کمی، خاندانی پریشانی،تمباکو کا زہر،گردوں کی بیماری ، تھرایڈ کی خرابی اور بعض ادویات شامل ہیں. انسانی صحت کو بگاڑنے میں کسی چیز کا دباؤ اور بے چینی ، دو اہم ترین عوامل ہیں. اسلیے ضروری ہے کہ انسان ان عوامل کا انتظام کر کے رکھے. بہت سارے لوگ اس کنڈیشن میں گھریلو قدرتی علاج تلاش کرتے ہیں. اینزائٹی سے بچنے کے چند گھریلو قدرتی علاج درج ذیل ہیں: 1. کیمومائل (Chamomile) کیمومائل جسے اردو میں بابونہ کہا جاتا ہے ایک مقبول جڑی بوٹی ہے جو بہت سارے فوائد کیلیے استعمال ہوتی ہے. اسے پریشانی، بے چینی کو دور کرنے کے لئے بھی استعمال کیا جاتا ہے. چنانچہ کیمومائل چائے اور نباتی تیل ، دونوں کو مکس کر کے اینزائٹی سے بچاؤ کیلیے استعمال کیا جاتا ہے.

ریسرچ کے مطابق Apigenin، Quercetin اور Patuletin جیسے عوامل ، قدرتی طور پر کیمومائل جڑی بوٹی میں شامل ہوتے ہیں جو بے چینی کو دور کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں . استعمال کرنے کا طریقہ: دو یا تین چائے کے چمچ خشک چاکلیٹ، جرمن کیمومائل، ایک کپ گرم پانی میں تین سے پانچ منٹ تک ڈال کر رکھیں . اگر آپ چاہیں تواس میں شہد اور دار چینی کا اضافہ کرلیں .کم ازکم ایسی چائے کو آپ ایک ماہ ، دن میں چند بار پیئں.یا جب تک آپ کو بہتری نظر نا آئے تب تک پیتے رہیں. یا آپ اسے اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کر کے دوائی کے طور پر بھی استعمال کر سکتے ہیں. 2. اورنجز (Oranges) سنگترہ کے چھلکوں کی بو اعصاب کو پرسکون کرنے میں مدد کرتی ہے. اروما تھیراپی کو جب مساج تھراپی کے ساتھ استعمال کیا جاتا ہے تو یہ ذہنی مریضوں کیلیے بہت مؤثر ثابت ہوتا ہے.نباتی تیل دماغ اور اعصابی نظام، دونوں پر اثر انداز ہوتا ہے. اس کے علاوہ، کینو کی خوشبو سے ڈپریشن سے لڑنے اور استحکام کو بڑھانے میں مدد ملتی ہے.بے چینی کو کم کرنے اور موڈ کو بہتر بنانے کے لئے کئی کلینیکل ٹرائلز میں اورنج آرموتھراپی استعمال کی گئی ہے.

2015 میں شائع ہونے والے ایک تجزیہ سے پتہ چلتا ہے کہ سنگترہ کی خوشبو ایک محفوظ اور مؤثر تھراپی ہے جس کی بدولت خواتین کو پیدائش کے وقت ان کی پریشانی پر قابو پانے میں مدد ملے گی . اسی طرح یہ خوشبو ڈینٹل سرجری کے امراض کی پریشانی بھی کم کرتی ہے. استعمال کرنے کا طریقہ: پانی کے ایک برتن میں چند سنگتروں کے چھلکے ڈالیں اور اسے باندھ دیں . جب بھی آپ کو اینزائٹی محسوس ہو آپ اسے کھول کر تازہ خوشبو لے سکتے ہیں.ضرورت پڑنے پر دوبارہ بھی دہرا سکتے ہیں. اینزائٹی سے بچاؤ کیلیے سنگترے کے چھلکوں کا تیل بھی استعمال کیا جاتا ہے. نوٹ:ہمیشہ سنگترے کے چھلکوں کو دھو کر استعمال کریں. 3. روزمیری (Rosemary) اس کے پرسکون اثر کی وجہ سے Rosemary ایک اور مقبول گھریلو علاج ہے. اسے "یاد کی جڑی بوٹی" کے طور پر جانا جاتا ہے. اس کے علاوہ، یہ گردش کو فروغ دیتی ہے، عمل تنفس اور ڈائی جیسٹو سسٹم کو آرام دیتی ہے، میموری پر مثبت اثر انداز ہوتی ہے اور انسان کو چوکنا رکھتی ہے.

استعمال کرنے کا طریقہ: ایک کپ گرم پانی میں ایک یا دو چائے کے چمچ خشک خلیہ شامل کریں. تقریباً 10 منٹ کے لئے اسے ایسے ہی رہنے دیں، جب تک آپ نتائج سے مطمئن نہ ہوں تب تک اس چائے کو روزانہ پیتے رہیں. 4. لیوینڈر (Lavender) لیوینڈر ایک آئل ہے جسے لوگ ڈپریشن سے دور رہنے کیلیے، علاج کے طور پر استعمال کرتے ہیں. بے چینی، پریشانی اور دباؤکو ختم کرنے کیلیے اس گھریلو علاج کو یورپین میڈیکل ایجنسی نے بھی منظور کیا ہے.اس کے بایوکاسٹ اجزاء جیسے Linalool اور Linaly acetate کے سبب اس میں اعصابی نظام پر پرسکون اور آرام دہ اثر ہوتا ہے. استعمال کرنے کا طریقہ: دو کپ پانی ابالیں، اس میں لیوینڈر ایسینشل تیل کے دو سے چار قطرے شامل کریں اور اینزائٹی کو کم کرنے کے لئے اسکی بھاپ لیں . ضرورت کے طور پر دہرائیں.

اسکے علاوہ ، ایک چائے کا چمچ بادام کا آئل ، زیتون کا آئل یا کسی بھی آئل میں لیوینڈر آئل کے تین یا چار ڈراپس شامل کریں. اس تیل کو اپنی گردن، بیک اور کندھوں پر مساج کے طور پر استعمال کریں. روزانہ یا ہفتے میں چند بار، اس سے آپ کی حالت بہتر ہوجائے گی. 5. جائفل (Nutmeg) جائفل ایک خوشبودار گرم مصالحہ ہے جو سموسہ/کچوری، کیک، ایگنوگ، اور چاولوں کے لئے ،کم مقدار میں ذائقہ کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے. اس کے علاوہ یہ صحت کے لئے بھی فائدہ مند ہے کیونکہ یہ ڈپریشن کو روکتا ہے، اور پٹھوں کے آرام دہ کے طور پر کام کرتا ہے.یہ بے چینی، کشیدگی، اور ڈپریشن کا علاج کیلیے بہت اچھا گھریلو علاج ہے. Myristicin اور Safrole جائفل کے دو بڑے اجزاء ہیں جن میں دماغی حالت تبدیل کرنے کی خصوصیات ہیں. اس سے نیند کی کیفیت کو بھی ٹھیک کیا جا سکتا ہے. استعمال کرنے کا طریقہ: اپنے موڈ کو بہتر کرنے اور دماغی تھکاوٹ کو کم کرنے کے لئے صرف اس خوشبودار مصالحہ کو سونگھیں. آپ باقاعدگی کی بنیاد پر اپنے کھانے میں ایک چوتھائی چائے کا چمچ جائفل پاؤڈر بھی شامل کر سکتے ہیں.

نوٹ: صرف ٹریس مقدار میں جائفل کا استعمال کیا جاسکتا ہے ، کیونکہ اس سے زہریلا پن یا نفسیاتی اثرات بھی پیدا ہوسکتے ہیں. 6. لیمن بام (Lemon Balm) لیمن بام، ایک آرام دہ اور اعصابی ٹانک کے طور پر کام کرتا ہے. اسے پریشانی کو کم کرنے، نیند کو فروغ دینے اور بھوک کو بہتر بنانے کے لئے استعمال کیا گیا ہے. پرانے دنوں میں، شراب کے نشے میں دھت لوگوں کو خوش کرنے کے لئے لیمن بالم استعمال کیا جاتا تھا. لیمن بام کی پتیوں میں Phytochemicals شامل ہوتا ہے جسے Terpenes اور Tannins کہا جاتا ہے جو بنیادی طور پر اس کے حیاتیاتی اثرات کے بہت ذمہ دار ہیں.ایگینول، لیمن بالم کا ایک حصہ ہے اسے Antibacterial خصوصیات کے لئے جانا جاتا ہے . لیمن بام کی پتیاں خشک چائے ، سپلیمنٹ یا ایسینشل تیل اور ٹنکچر کے طور پر بھی دستیاب ہوتی ہیں..آپ اس کو ہربل منشیات کے اسٹورز یا آن لائن بھی خرید سکتے ہیں.

آپ لیمن بام چائے کی پتیوں کو والیرین، سبز چائے، لیوینڈر، کیٹنپ یا دیگر جڑی بوٹیوں کے ساتھ بھی ملا سکتے ہیں. استعمال کرنے کا طریقہ: نیبو بام حیرت انگیز طور پر ایک اروماتھراپی ایجنٹ کے طور پر کام کرتا ہے.اس سے پرسکون اثر حاصل کرنے کے لئے براہ راست اس کو ان ہیل کریں . جب آپ کو گھبراہٹ محسوس ہو تو آپ لیمن بالم ٹنکچر کے 60 قطرے استعمال کر سکتے ہیں. احتیاط: اس جڑی بوٹی کا اضافی استعمال نہ کریں، یہ آپ کو زیادہ فکر مند بنا سکتا ہے. دل کی گھبراہٹ ،بے چینی، ڈر اور خوف سے بچنے کا قرآنی وظیفہ اگر آپ کے دل میں گھبراہٹ سے وحشت سی ہوتی ہے، ہر وقت بے چینی کی کیفیت رہتی ہے. یا کسی چیز سے ڈر لگتا ہے یا خوف محسوس ہوتا ہے. تو پریشان ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے، کیونکہ ایسی کوئی چیز نہیں ہے کہ جس کا حل قرآن پاک و حدیث مبارکہ میں موجود نہ ہو. الَّذِينَ آمَنُوا وَتَطْمَئِنُّ قُلُوبُهُم بِذِكْرِ اللَّهِ ۗ أَلَا بِذِكْرِ اللَّهِ تَطْمَئِنُّ الْقُلُوب (الرعد، آیت نمبر 28 ) وَنُنَزِّلُ مِنَ الْقُرْآنِ مَا هُوَ شِفَاءٌ وَرَحْمَةٌ لِّلْمُؤْمِنِينَ (بنی اسرائیل، آیت نمبر 82) ان دونوں آیات کو جب بھی آسانی سے ممکن ہو، پڑھیں. انشاء اللہ ہر قسم کے خوف، گھبراہٹ اور بے چینی سے نجات مل جائے گی.

..


Top