پاکستان میں کورونا وائرس عروج پر کب پہنچے گا؟ لاک ڈاؤن ختم ہوتے ہی ماہرین نے بُری خبر سنادی

اسلام آباد(قدرت روزنامہ) پاکستان میں گزشتہ 10 دنوں کے دوران کورونا وائرس سے ہونے والی 28 اپریل سے 7 مئی کے دوران 100 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور ہر صوبے میں رپورٹ ہونے والے کیسز کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے . اعداد و شمار کے مطابق 26 فروری کو ملک میں وائرس سے پہلا کیس رپورٹ ہونے کے بعد سے اب تک مئی کو ملک میں سب سے زیادہ 46 اموات ہوئیں اور مارچ کے مہینے میں ایک ہندسے میں ہونے والی اموات کا اضافہ اپریل کے مہینے میں دوہرے ہندسے تک پہنچ گیا ہے .

کورونا وائرس سے ملک میں صرف 28 اپریل سے 7 مئی کے دوران 297 اموات رپورٹ ہوئیں جو اب تک ملک میں ہونے والی 591 کا 49.7 فیصد بنتی ہے اور اس خطرناک رجحان کے باوجود کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے لاگو کیے گئے لاک ڈاؤن میں 9 مئی کے بعد سے نرمی کا فیصلہ کیا ہے. مارکیٹوں کو ہفتے میں پانچ دن کھلنے کی اجازت ہو گی لیکن صوبوں کی جانب سے لاک ڈاؤن میں نرمی کا فیصلہ کیے جانے کے باوجود روزانہ کی بنیاد پررپورٹ ہونے والے کیسز

کی تعداد میں اضافہ ہو گا. 28 اپریل سے 6 مئی تک ملک بھر میں 10ہزار 365 مصدقہ کیسز رپورٹ ہوئے جو اب تک رپورٹ ہونے والے کیسز کا ایک تہائی بنتے ہیں جبکہ سب سے زیادہ اضافہ 6مئی کو ریکارڈ کیا گیا تھا جب ملک میں ایک ہزار 430 کیسز رپورٹ ہوئے تھے. طبی ماہرین نے خبردار کیا ہے مئی کے مہینے میں وائرس عروج پرپہنچ سکتا ہے جس سے رپورٹ ہونے والی کیسز اور اموات کی شرح میں اضافہ ہو سکتا ہے. اپریل کے اختتام پر سندھ انسٹیٹیوٹ آف یورولوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن کے انفیکشن ڈیزیز کے سربراہ ڈاکٹر سنیل دودانی نے ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ مثبت کیسز کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے، شدید بیماری کے حامل مزید مریض سامنے آرہے

..


Top