بڑے فیصلوں کا دن۔!!!قومی اسمبلی کا اجلاس 11 مئی کو بلانے کا اعلان

اسلام آباد (قدرت روزنامہ) قومی اسمبلی کا اجلاس پیر 11 مئی سہ پہر 3 بجے بلانے کا فیصلہ کر لیا گیا . نجی ٹی وی نیوز چینل کے مطابق پارلیمنٹ ہاؤس میں سید فخر امام کے زیر سربراہی ہونے والی پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس کی تفصیلات بتاتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ بروز پیر تین بجے پارلیمان کا اجلاس بلایا جائے گا .

اجلاس کورونا وائرس کی صورت حال تک محدود رکھا جائے گا. یہ بھی طے ہوا کہ کورم کی نشاندہی نہیں کی جائے گی اور اجلاس ایک دن کے وقفے سے جاری رکھا جائے گا. پریس گیلری کے علاوہ مہمانوں کو اجلاس میں شرکت کی اجازت نہیں ہو گی. پارلیمنٹ لاجَز میں بھی آمدورفت کو محدود رکھا جائے گا. شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پارلیمان کو قومی اتفاق رائے کے لئے استعمال کیا جانا چاہے. ہمیں کرونا وائرس کی صورتحال اور قومی ایکشن پلان پر توجہ دینا چاہیے. اجلاس میں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی صحت یابی کے لیے بھی دعا کی گئی. دوسری جانب قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کا حکومتی فیصلہ سامنے آنے کے بعد مسلم لیگ ن سمیت حزب اختلاف نے اجلاس بلانے کے لیے جمع کروائی گئی ریکوزیشن بھی واپس لی ہے. واضح رہے کہ حزب اختلاف کی جماعتوں کی جانب سے تسلسل کے

ساتھ کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورت حال پر پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا جارہا تھا. دوسری جانب سید فخر امام کی سربراہی میں پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ قومی اسمبلی کا اجلاس پیر کی سہ پہر تین بجے بلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے. انہوں نے بتایا کہ اجلاس کا دورانیہ ڈیڑھ سے دو گھنٹے تک ہوگا. سپیشل سیشن صرف کووڈ 19 سے متعلق ہوگا جس مین کوئی وقفہ سوالات، تحریک استحقاق اور تحریک التوا نہیں ہوگی. وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ بھی فیصلہ ہوا ہے کہ اجلاس میں کورم کی نشاندہی نہیں کی جائے گی. پریس گیلری کے علاوہ کوئی وزیٹر گیلری نہیں کھلے گی.شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اس اجلاس میں بجٹ اجلاس کے حوالے سے اتفاق رائے پیدا کرنے کی بھی کوشش کی جائے گی.

..


Top