اب بھی کہو کپتان کو کسی کی فکر نہیں۔!!! وزیراعظم کا معاشی عمل مزید تیز کرنے کیلئے بڑے اقدامات کا فیصلہ

اسلام آباد(قدرت روزنامہ) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کوروناوائرس کنٹرول کرنے کیلئے سارے وسائل استعمال کر رہے ہیں اور بہتر حکمت عملی کے تحت خوف کی فضا ختم ہو رہی ہے . وزیراعظم عمران خان سے مشیر پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان نے ملاقات کی ہے جس میں ملکی موجودہ صورت حال سمیت آئینی اور قانونی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے .

گڈ گورننس اور انتظامی معاملات میں بہتری کیلئے مختلف تجاویز پربھی مشاورت کی گئی ہے. کورونا وائرس کے پیش نظرعوامی ریلیف کیلئے حکومتی فیصلوں پر بھی بات چیت ہوئی. وزیراعظم نے کہا کہ کورونا کی وبا کے دوران ملک میں سب سے بڑا چیلنج عام آدمی تک فوری ریلیف پہنچانا تھا اور مجھے خوشی ہے کہ معاشی ٹیم نے بروقت ہنگامی ایکشن پلان ترتیب دیا. ان کا کہنا تھا کہ ملک میں معاشی عمل مزید تیز کرنے کیلئے بڑے اقدامات کرنے جا رہے ہیں. مشیر پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا کہ مشکل صورت حال میں حکومت نے تدبر کا مظاہرہ کیا اور ملکی تاریخ میں پہلی بار غریب دوست ریلیف پیکجزدئیے گئے ہیں. بابراعوان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن جماعتوں کے پاس عوامی منشور نہیں صرف الزام کی سیاست کی جا رہی ہے. مشیر پارلیمانی امور نے پارلیمنٹ میں قانون سازی

جاری رکھنے کیلئے مختلف آپشنز سے بھی آگاہ کیا. ملاقات میں پارلیمنٹ کا اجلاس بلائے جانے کے معاملے پر بھی مشاورت. ڈاکٹربابر اعوان نے کہا کہ پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے سے پہلے حفاظتی انتظامات کو یقینی بنانا ہوں گے. اس معاملے پر این ڈی ایم اے اور این سی او سی سے رابطے میں ہیں. انہوں نے کہا کہ خوشی ہے معاشی ٹیم نے بروقت ہنگامی ایکشن پلان ترتیب دیا، ملک میں معاشی عمل تیز کرنے کے لیے بڑے اقدامات کرنے جارہے ہیں، ملکی تاریخ میں پہلی بار غریب دوست ریلیف پیکجز دیے گئے ہیں. دریں اثنا بابر اعوان کا کہنا تھا کہ مشکل صورت حال میں حکومت نے تدبر کا مظاہرہ کیا ہے، اپوزیشن کے پاس عوامی منشور نہیں صرف الزام کی سیاست کررہی ہے، پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے سے پہلے حفاظتی انتظامات کو یقینی بنانا ہوگا. انہوں نے بتایا کہ معاملے پر این ڈی ایم اے اور این سی اوسی سے رابطے میں ہیں، انتظامات تسلی بخش ہوئے تو قانون سازی کو بلاتا خیر شروع کیا جائے گا. اس موقع پر بابراعوان نے پارلیمنٹ میں قانون سازی کے لیے مختلف آپشنز سے بھی آگاہ کیا، پارلیمنٹ کا اجلاس بلائے جانے کے معاملے پر بھی گفتگو ہوئی.

..


Top