ترکی میں کرونا وائرس کے وار جاری۔۔!! ترک صدر رجب طیب اردوان نے ناقابل یقین اعلان کر دیا

استنبول(قدرت روزنامہ) ترکی میں بھی مہلک کرونا وائرس کے وار جاری ہیں. جس کی روک تھام کیلئے ترک صدر رجب طیب اردوان کی جانب سے اقدامات کیئے جارہے ہیں انہوں نے اپنی چار ماہ کی تنخواہ بھی کرونا فنڈ میں دی اور اب کرونا سے بچاو کیلئے ملک بھر میں مفت ماسک کی فراہمی کا اعلان کردیا ہے.ترک میڈیا کے مطابق صدر اردوان نے ترکی میں فیس ماسک کی فروخت پر پابندی عائد کردی ہے اور ماسک کی خرید و فروخت سے منع کردیا ہے. کیونکہ ان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس اتنی مقدار میں ماسک موجود ہیں جو ترکی کی پوری آبادی کیلئے کافی ہیں.ان کا کہنا تھا کہ سپرمارکیٹس میں فیس ماسک مفت فراہم کیے جائیں گے جبکہ شہری پوسٹ اینڈ ٹیلی گراف آرگنائزیشن کے ذریعے بلامعاوضہ ماسک منگوا سکتے ہیں .

انہوں نے بتایا کہ ترک حکومت بڑی تعداد میں مفت ماسک تقسیم کر چکی ہے جبکہ اس عالمی وبا کے خاتمے تک شہریوں کو مفت ماسک کی فراہمی کے لیے بڑے پیمانے پر تیاری جاری رہے گی.اتنا ہی نہیں عوام کو بروقت طبی امداد فراہم کرنے کیلئے ترک صدر نے استنبول میں کرونا متاثرین کیلئے دو اسپتال بنانے کا اعلان بھی کردیا ہے.ان کا کہنا تھا کہ دونوں اسپتال مجموعی طور پر دو ہزار بیڈز پر مشتمل ہوں گے.. جس میں سے ایک اسپتال ایورپی سائیڈ پر اتاترک ایئرپورٹ میں اور دوسرا ایشیائی حصے کی طرف بنایا جائے گا.ترکی میں کرونا کے کیسز کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے. اب تک چونتیس ہزار سے زائد وائرس کا شکار ہوچکے ہیں جبکہ سات سو باون جاں بحق ہوئے ہیں.

.

ضرور پڑھیں: کورونا کیخلاف جنگ!!! ترک صدر نے بڑا اعلان کر دیا

.

ضرور پڑھیں: ترک صدر ذاتی دفاع کے لیے فورس تشکیل دے رہے ہیں،امریکی اخبار


Top