CORONAVIRUS
PAKISTAN
CONFIRMED CASES

2754

  • Deaths
    43
  • Sindh
    830
  • Punjab
    1087
  • Balochistan
    185
  • KP
    372
  • Islamabad
    75
  • GB
    193
  • AJK
    12

 

 


بالی ووڈ کو اب تک کا سب سے بڑا جھٹکا ..!! چاروں شانے چت کمر ٹوٹ گئی ،جانیے

اسلام آباد (قدرت روزنامہ) ’ تھیئٹر کے بند ہونے اور فلموں کی ریلیز ملتوی ہونے سے کاروبار کو تو بہت بڑا نقصان ہو ہی رہا ہے جس کا خمیازہ جلد ممکن نہیں . ساتھ ہی فلم انڈسٹری سے منسلک تقریبا 5 لاکھ ملازمین کی روزی روٹی بھی خطرے میں پڑ گئی ہے .

ضرور پڑھیں: ’اس فلم کیلئے میں مکمل ننگی ہوگئی تھی۔۔۔ ‘کرینہ کپور کے تہلکہ خیز بیان نے بالی ووڈ کی شرمناک اصلیت سے پردہ اٹھا دیا

پھر بھی میرا یہی خیال ہے لوگوں کا تحفظ اولین ترجیج ہے‘.اگروال کہتے ہیں ‘کورونا وائرس کی وجہ سے فلم انڈسٹری سے منسلک سبھی تنظیموں نے 19 مارچ سے 31 مارچ تک سبھی فلموں اور سیریلز کی عکس بند پر پابندی عائد کردی گئی ہے. کیونکہ اداکار ماکس لگا کر شوٹنگ نہیں کرسکتے ہیں. اس لیے ان کی حفاظت تبھی ممکن ہے جب شوٹنگ کو مکمل طور پر روک دیا جائے. بس اب حدف یہی ہے کہ نقصان کو برداشت کرتے ہوئے سب کی صحت سلامت رہے‘.بیشتر ریاستوں میں سنیما گھر بند ہونے اور اب فلموں اور سیریل اور ویب سیریز کی عکس بندی روکنے کے بعد فلم انڈسٹری کے ساتھ ساتھ ٹی وی انڈسٹری بھی نقصان کی راہ پر ہے.

ٹی وی پر سیریل کے نئی قسطیں نشر نہیں ہونگی اور اب ان کی جگہ پرانی قسطیں نشر کرنا ٹی وی چینلز کی مجبوری بن گئی ہے. ایسے میں پریشانی یہ ہے کہ ٹی وی چینلز کو نئے اشتہارات ملنا کم ہوجائے گا جس سے چینلز کو بڑا نقصان برداشت کرنا ہوگا.ملک میں سنیما گھروں کے بند ہونے سے انڈیا کی تھیئٹرس کی بڑی سب سے بڑی کمپنی یا چین ‘پی وی آر’ کو بھی ہوگا.پی وی آر کے پاس ملک کے 22 اضلاع میں 850 سکرینز ہیں جن میں صرف دلی میں ان کی 68 سکرینو ہیں. پی وی آر کمپنی کے سی ای او گوتم دتا بتاتے ہیں، ’فلموں کی ریلیز معطل ہونے اور سنیما ہال بند ہونے سے فلمی صنعت کو بہت بڑا نقصان ہوگا لیکن اس نقصان کا فی الوقت اندازہ لگانا مشکل ہے. سنیما گھروں کے بند ہونے سے ہونے والے نقصان کا افسوس تو لیکن فی الحال ہمیں ایک بہت بڑی لڑائی کا سامنا ہے. کورونا وائرس سے بچاؤ اور لوگوں کی حفاظت بھی بہت اہم ہے‘.دوسری جانب ریلائنس اینٹرٹنمنٹ کی ‘ سوریے ونشی’ اور ‘ 83’ کی ریلیز ہونا مشکل اب لگ رہا ہے. اس بارے میں کمپنی کے سی ای او شباشیش سرکار کا کہنا ہے ، ’ابھی فلم 83 کی ریلیز کے بارے میں ہم نے کیوں نیا اعلان نہیں کیا ہے. ہم حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں. اگر حالات جلد ٹھیک ہوجاتے ہیں تو فلم اپنی طے شد تاریخ 10 اپریل کو ہی ریلیز ہوسکتی ہے. اگر نہیں تو فلم کی ریلیز کو ملتوی کرنا پڑے گا‘.

..

ضرور پڑھیں: بالی ووڈ نے پاکستان کے کون سے گانے چرائے۔۔۔جان کر آپ بھی حیران ہوجائیں گے


Top