کوئٹہ‘بلوچستان میں بڑا انسانی المیہ جنم لینے لگا ‘ برفباری میں 28افراد جاں بحق

‘درجنوں ہسپتال منتقل ‘ ملک بھر سے زمینی رابطہ منقطع‘سڑکوں پر ہزاروں افراد محصور‘کھانا ختم‘بڑے انسانی جانی نقصان کا خطرہ

کوئٹہ ( رپورٹ‘ظفر اللہ اچکزئی )بلوچستان میں شدید برفباری اور بارشوں کے بعد مکانات کی چھت گرنے گیس پریشر میں کمی کے باعث دم گھٹنے سے 28افراد جاں بحق جبکہ 32افراد گیس کے باعث بے ہوش ہوگئے ماشکیل کے علاقے میں بارشوں کے باعث بچوں اور خواتین سمیت 50کے قریب آفیسران پھنسے ہوئے تھے اور ایف سی اہلکار 19افراد کو نکلانے میں کامیاب ہوگئے تفصیلات کے مطابق بلوچستان میں ہفتے سے شروع ہونے والی برف باری ا توار کی رات کو تھم گئی تھی تاہم شدید برف کے باعث کوئٹہ اور اندرون صوبہ رابطہ سڑکیں بلاک ہیں . پی ڈی ایم اے کنٹرول روم کے مطابق برف باری کے باعث کوئٹہ مستونگ شاہراہ لک پاس کے مقام پر بڑی گاڑیوں کے لیے بند ہے جب کہ کان مہترزئی، کوئٹہ زیارت، سنجاوی زیارت شاہراہ اور قلعہ عبداللہ میں کوژک ٹاپ بھی بند ہے .

پی ڈی ایم کے مطابق بارش اور برف باری کے باعث ضلع ژوب، پشین، قلعہ عبداللہ میں چھتیں گرنیاور گیس کے پریشر میں کمی کے باعث دم گھٹنے سے 19 افراد ہلاک ہوئے.بارش اور برف باری کے باعث مستونگ، چاغی اور نوشکی میں بھی گھروں کی دیواریں اور چھتیں گرنے کی اطلاعات ہیں اور وہاں انتظامیہ کے مطابق سروے جاری ہے جبکہ آزادذرائع سے ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ بتا یا جارہا ہے ژوب میں شہابزئی اور نیو ناصران میں 8افراد قلعہ عبداللہ کے علاقے کلی لقمان میں 6موسیٰ خیل میں 2،پشین میں 3،پراخی میں 1،جبکہ کوئٹہ میں گیس دم گھٹنے کے باعث خواتین اور بچوں سمیت 10افراد جاں بحق ہوگئے دوسری جانب ضلع واشک کی تحصیل ماشکیل میں بارشوں کے باعث دلدلی مٹی میں کئی افراد پھنسے ہوئے ہیں. مقامی افراد نے بتایا کہ ایک اندازے کے مطابق بارشوں کے باعث بچوں اور خواتین سمیت 50 کے قریب افراد پھنسے

ہوئے ہیں اور ایف سی کے اہلکار ان میں سے 19 افراد کو نکالنے میں کامیاب ہوئے ہیں.پی آئی اے حکا م کے مطابق رن وے پر برف کے باعث کوئٹہ آنے اور جانے والی تمام پروازیں منسوخ کردی گئی ہیںواضح رہے کہ حکومت بلوچستان نے حالیہ برف باری کے باعث کوئٹہ، زیارت، پشین، قلعہ عبداللہ، کچھی کولپور ایریا، مستونگ اور ہرنائی میں ایمرجنسی نافذ کر رکھی ہے. محکمہ موسمیات کے مطابق کوئٹہ میں ایک فٹ سے زائد برف باری ریکارڈ کی گئی جب کہ زیارت شہر میں دو فٹ اور پہاڑوں پر ڈھائی فٹ تک برف باری ریکارڈ کی گئی.مکران ڈویژن میں بارشوں کے باعث بعض علاقوں میں سیلابی کیفیت ہے اور ساحلی علاقوں پسنی اور اورماڑہ میں طوفانی ہواں اور بارش سے ماہی گیروں کی کشتیوں کونقصان پہنچا ہے.چستان کے علاقے کا ن مہترزئی میں قومی شاہراہ پر برف جمنے کے بعد 200سے زائد مسافر کوچز اور چھوٹی مسافر گاڑیاں پھنس گئے کوئٹہ کا پنجاب اور خیبر پختوا سے رابطہ منقطع لورالائی سے کوئٹہ سپورٹس ایونٹ میں شرکت کرنے والے کھلاڑی بھی پھنس گئے انتظامیہ کی جانب سے پھنسے افراد کو محفوظ مقامات پر نکالنے کیلئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں پھنسے افراد میں زیاد ہ تر خواتین اور بچے شامل ہیں لیویز حکام کے مطابق پیر کی شام کان مہترزئی کے مقام پر یخ بستہ ہوائیں چلنے سے کوئٹہ ژوب،کوئٹہ لورالائی قومی شاہراہ پر برف جمنے کے بعد قومی شاہراہ بند ہوگئی اور کئی گاڑیاں پھسلنے کی وجہ سے ایک دوسرے سے ٹکرا گئی کان مہترزئی پر 200سے

زائد مسافر کوچز چھوٹی مسافر گاڑیاں صبح سے پھنسی ہوئی ہیں لیویزحکام نے پہلے ہی خبردار کیا تھا کہ کان مہترزئی کے مقام پر قومی شاہراہ پر برف جمنے کے باعث گاڑیوں کے چلنے کے قابل نہیں ہے تاہم اس کے باوجود مسافروں اور لوگوں نے سفر شروع کیا مسافر گاڑیوں میں 40سے 50کے قریب شیر خوار بچے ،خواتین اور بزرگ بھی موجود ہیں ڈپٹی کمشنر قلعہ سیف اللہ نے بتا یا کہ انتظامیہ کی طرف سے آگاہ کر دیاگیا تھا کہ شدید برفباری کے باعث راستے بند ہیں تاہم اس کے باوجود لوگوں نے اس طرف توجہ نہیں دی انہوں نے بتا یا کہ امید ہے متاثرہ مسافروں کو کلیوں تک پہنچا یا جائے گا اور ان کیلئے تمام انتظامات کردیئے جائینگے تاہم کان مہترزئی زیارت اور دیگر علاقوں میں تین دن سے جاری برفباری تھم گئی تاہم ان علاقوں میں تین سے چار فٹ برف پڑ چکی ہے تاہم مسافروں کے پاس کھانے پینے کی ایشاء بھی ختم ہورہی ہے گاڑیوں میں ڈیزل وپٹرول بھی ختم ہورہا ہے واپس جانے کا بھی راستہ نہیں ہے تاہم علاقے کے لوگوں نے اپنے مدد آپ کے تحت متاثرہ افراد کو کھانافراہم کردیا گیا .

..


Top