سعودی عرب سے مزید غیرملکیوں کی چھٹی، ملک میں تارکین وطن ملازمین کی شامت آگئی

جدہ((قدرت روزنامہ)سعودی حکومت سعودائزیشن پروگرام کے تحت اب تک کئی سیکٹرز میں غیرملکیوں کے کام کرنے پر پابندی عائد کر چکی ہے . اس حوالے سے اب سعودی عرب میں کام کرنے والے تارکین وطن کے لیے ایک اور بری خبر آ گئی ہے .

ضرور پڑھیں: وزیراعظم سٹیزن پورٹل نے کامیابی کی مثال قائم کردی،غیرملکیوں نےکتنی شکایات درج کروائیں اور کتنے فیصد شکایات کا ازالہ ہوا؟جانئے

سعودی گزٹ کے مطابق اب حکومت نے ہیلتھ اور سیفٹی کے شعبے بھی سعودی شہریوں کے لیے مختص کر دیئے ہیں اور آج کے بعد ان شعبوں میں بھی کسی تارک وطن کو ملازمت نہیں ملے گی. سعودی وزارت محنت و سماجی ترقی کی طرف سے کیے گئے اس فیصلے کے بعد تمام میگا، میڈیم اور بڑی انٹرپرائزز میں ہیلتھ اینڈ سیفٹی کی نوکریوں پرسعودی شہریوں کو رکھا جائے گا. وزارت کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اس اقدام کا مقصد ورکرز کی صحت اور تحفظ کو بہتر بنانا اور ماحول کی حفاظت کرنا ہے. اس سے پرائیویٹ سیکٹر میں بھی سعودی نوجوانوں کے لیے ملازمتوں کے نئے مواقع پیدا ہوں گے.

..

ضرور پڑھیں: سعودی عرب میں کام کرنے والے غیرملکیوں کے لیے خطرہ، ملازمت کے دروازے بند


Top