سعودی عرب میں ملازمتیں کرنے والوں پر کوئی ٹیکس عائد نہیں کیا جارہا. سعودی وزیرخزانہ

ریاض(قدرت روزنامہ)سعودی عرب کے وزیر خزانہ محمد الجدعان نے کہاہے کہ”سٹیزن اکاﺅنٹ“ پروگرام 2020ءمیں بھی جاری ر کھا جائے گا‘ غیرملکی تارکین وطن اور ملک میں ملازمت کرنے والے غیرملکیوں پر کوئی نیا ٹیکس لاگو نہیں کیا جا رہا ہے. عرب نشریاتی ادارے سے انٹرویو میں انہوں نے بتایا کہ ” سٹیزن اکاﺅنٹ“ پروگرام میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے اس پروگرام کے تحت شہریوں کو رقوم کی فراہمی آئندہ سال بھی معمول کے مطابق جاری رہے گی انہوں نے بتایا کہ معاشرتی تحفظ کے نظام کے مطالعے کی روشنی میں پروگرام کی مدت کی تکمیل کا اعلان کیا جائے گا.

انہوں نے کہا کہ رواں اور آئندہ دو سالوں کے درمیان بجٹ میں شہری الاﺅنس یا شہری اکاﺅنٹ کی لاگت میں کوئی خاص فرق نہیں ہے‘ایک سوال کے جواب میں الجدعان نے بتایاکہ تارکین وطن پرکوئی نیا ٹیکس لاگونہیں کیا جارہا ہے حکومت مستقل طور پر اپنے اقدامات کا جائزہ لیتی رہتی ہے تارکین وطن اور ان کے ساتھ آنے والوں کی فیسوں کمی بیشی کا کوئی ارادہ نہیں ہے. سعودی کابینہ نے گذشتہ 24 ستمبر کو فیصلہ کیا تھا کہ صنعتوں میں کام کرنے والے افراد کے لیے یکم اکتوبر سے 5 سال کی مدت تک حکومت تارکین وطن ملازمین کے صنعتی الاﺅنسز برداشت کرے گی‘

سعودی عرب نے تارکین وطن کی طرف سے اپنے ساتھ لائے جانے والے افراد پر”مالی معاوضہ“ کا اطلاق شروع کیا 2017ءکے دوسرے نصف حصے میں ایسے تارکین وطن کے لیے 100 ریال فی کس عائد کیے گئے تھے.الجدعان نے تصدیق کی ہے کہ سعودی عرب کے بجٹ کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ موجودہ سال میں بہت کچھ حاصل کیا ہے آنے والے سال میں بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں اور ان کی سروسزنیز نجی شعبے کو با اختیار بنانے اور شہریوں کی ترقی وبہبود کے لیے مزید بہتری کی توقع رکھتے ہیں‘تیل کی آمدنی کے بارے میں الجدعان نے کہا ویژن 2030 کا ایک ہدف آمدنی کے ذرائع کو متنوع بنانا ہے اور ہم اس شعبے میں کام جاری رکھیں گے تیل کے علاوہ دیگر ذرائع سے محصولات کے تناسب میں اضافہ کریں گے

ان کا کہنا تھا کہ نیشنل آئل کمپنی آرامکو کے حصص کی فروخت کے بعد تیل کی آمدن بدستور جاری ہے اور اس پر کوئی منفی اثر نہیں پڑا ہے. العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے نشاندہی کی کہ پچھلے سال 2019ءکے آغاز میں منافع کا حجم 75 ارب ریال تھا جو کہ اس سے پچھلے سال کی نسبت کہیں زیادہ ہے انہوں نے کہا کہ میں ہمیشہ پر امید ہوں اور ہم امید کرتے ہیں کہ تیل اور غیر تیل کی آمدنی توقع سے کہیں زیادہ ہوگی.

. .


ضرور پڑھیں: حکومت نے پٹرولیم مصنوعات پر عائد ٹیکس میں کمی کر دی

ضرور پڑھیں: بریکنگ نیوز:پنجاب حکومت کا سینماء انڈسٹری کو ٹیکس میں مکمل چھوٹ دینے کا فیصلہ ، نوٹیفکیشن جاری


Top