single photo

کیا واقعی برطانیہ میں ملک ریاض کی جائیدادیں ضبط کی گئیں ؟ اصل حقیقت سامنے آ گئی

اسلام آباد (قدرت روزنامہ)کچھ دیر قبل میڈیا میں یہ خبر اچانک گرم ہوئی کہ برطانیہ میں نیشنل کرائم ایجنسی اور پاکستانی کاروباری شخصیت کے درمیان سیٹلمنٹ ہو گئی ہے اور این سی اے نے پاکستانی شخصیت کی 190 ملین پاﺅنڈ کی پیشکش قبول کر لی ہے جبکہ یہ رقم پاکستان کو واپس کی جائے گی تاہم اب اس معاملے پر بحریہ ٹاﺅن کے بانی ملک ریاض خود میدان میں آ گئے ہیں اور اصل حقیقت سے پردہ اٹھا دیاہے . تفصیلات کے مطابق معروف کاروباری شخصیت ملک ریاض نے ٹویٹر پر اس معاملے کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ ”کچھ عادت سے مجبور لوگ نیشنل کرائم ایجنسی کی رپورٹ کو 180 ڈگر پر گھما کر پیش کر رہے

ہیں تاکہ مجھ پر کیچڑ اچھال سکیں ، میں نے بحریہ ٹاﺅن کراچی سے متعلق معاملے میں سپریم کورٹ کو 190 ملین پاﺅنڈ کی ادائیگی کیلئے برطانیہ میں اپنی قانونی اور ظاہر کی ہوئی جائیدا د فروخت کی ہے .

ضرور پڑھیں: برطانیہ میں اوپر تلے 3 عام انتخابات ۔۔۔۔آخر ہو کیا رہا ہے ؟ حیران کن حقائق سامنے آگئے

ملک ریاض کا کہناتھا کہ نیشنل کرائم ایجنسی کی پریس ریلیز کہتی ہے کہ یہ سول معاملہ ہے اوریہ کسی قسم کی خلاف ورزی کو ظاہر نہیں کرتا ،میں ایک با فخر پاکستانی ہوں اور میں اپنی آخری سانس تک رہوں گا ،

پاکستان زندہ باد . یاد رہے کہ میڈیا میں چلنے والی خبروں میں دعویٰ کیا گیا کہ نیشنل کرائم ایجنسی نے ملک ریاض کی 50 ملین پاونڈ کی جائیداد ضبط کی ہے جبکہ 140 ملین پاونڈ کیش کی صورت ٰمیں اکاونٹس میں موجود تھے تاہم اب بحریہ ٹاون کے بانی ملک ریاض نےاس معاملے پر خود میدان میں آتے ہوئے وضاحت جاری کر دی ہے.

..

ضرور پڑھیں: برطانیہ؛ بھارتی ڈاکٹر پر خواتین مریضوں کے جنسی استحصال کی فرد جرم عائد

Top