single photo

مقبوضہ کشمیر،خوش کن ہوا کا جھونکا، اضافی فوجی نفری کا انخلا شروع

 

4000 سے 5000سنٹرل آرمڈ پولیس فورس کے جوان صورتحال میں بہتری کے پیش نظر کشمیر سے روانہ ہو گئے

سرینگر(قدرت روزنامہ)مقبوضہ کشمیر میں ایک اہم پیشرفت میں کم از کم چار سے پانچ کمپنیوں کے وادی چھوڑنے کے بعد بتدریج فوجی دستوں کا انخلا شروع ہوگیاہے . اضافی دستوں کی کم از کم چار سے پانچ کمپنیاں یعنی4000 سے 5000 سنٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایف)صورتحال میں بہتری کے پیش نظر کشمیر سے روانہ ہوگئی ہیں .

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق ایک اعلی سیکیورٹی ماہر نے بتایا کہ مزید انخلا کے بارے میں ابھی کوئی واضح ہدایات نہیں ہیں.بھارتی حکومت نے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے فیصلے سے قبل کشمیر میں 50000سے زیادہ سی اے پی ایف کو تعینات کیا تھا .انہوں نے کہا کہ اضافی فورسز کی 20 کمپنیاں جو کشمیر کے مختلف علاقوں میں تعینات کی گئیں ہیں ان کے بھی کشمیر سے انخلاء کا امکان ہے .ساؤتھ ایشین وائر کی

رپورٹ کے مطابق افسر نے کہا کہ یہ مجموعی صورتحال پر منحصر ہے ،اور کشمیر سے مزید کمپنیوں کی واپسی کے بارے میں فیصلہ مرحلہ وار کیا جائے گا.افواج کو امن وامان کے محاذ پر بہت کم چیلنج کا سامنا کرنا پڑا ، تاہم موسم کی شدت کی وجہ سے انہیں کافی تکلیف اٹھانا پڑی. کچھ جوانوں کو شکایت ہے کہ ان کی رہائش میں سردی سے بچاؤ کا مناسب بندوبست نہیں.صورتحال میں مزید بہتری آنے پر مزید کمپنیاں کشمیر چھوڑ دیں گی

..

Top