single photo

راولپنڈی میں چچا نے 7 سالہ بھتیجی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد گھر میں ہی قتل کر دیا

راولپنڈی (قدرت روزنامہ) راولپنڈی میں ڈھوک چودھریاں میں سات سال کی بچی مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر دی گئی . تفصیلات کے مطابق معصوم بچے اور بچوں کے ساتھ زیادتی اور قتل کے واقعات میں کسی صورت کمی نہیں ہو رہی .

ضرور پڑھیں: راولپنڈی میں طلاق کی شرح میں ہوشربا اضافہ، رواں سال میں کتنی ہزار خواتین نے طلاق حاصل کی؟ پریشان کن خبر

روزانہ بچوں کے ساتھ زیادتی کی کئی واقعات رپورٹ ہورہے ہیں.آج بھی راولپنڈی میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جس میں سات سال کی بچی کو گھر کے فرد نے ہی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر دیا. پولیس نے بچی کی لاش پوسٹ مارٹم کے لیے ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کردی ہے. اے ایس پی سول لائن نے کہا ہے کہ پوسٹ مارٹم کے بعد بچی سے زیادتی کی تصدیق ہوگئی ہے.سدرہ نامی بچی کے والد نور اللہ نے پولیس کو بتایا ہے کہ جب وہ کام سے واپس گھر آیا تو گھر کا دروازہ کھلا ہوا تھا ،اس کی بیوی سو رہی تھی اور اس نے اپنی بچی کو مردہ حالت میں کمرے کے باہر پڑا ہوا دیکھا. گھر میں مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بننے کے بعد قتل ہونے والی معصوم بچی کے حوالے سے پولیس نے بتایا ہے کہ بچی کی ناک اور منہ سے خون نکل رہا تھا اور گھٹنے پر چوٹ کا نشان بھی تھا.پولیس نے سات سال کی معصوم بچی کے ساتھ زیادتی اور قتل کے الزام میں بچی کے چچا کو حراست میں لے لیا ہے.وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے راولپنڈی میں پیش آنے والے اس افسوسناک واقعے کا نوٹس لے لیا ہے، وزیر اعلی پنجاب نے آر پی او راولپنڈی سے رپورٹ طلب کر کے افسوسناک واقعہ میں ملوث ملزمان کی جلد گرفتاری کا حکم دیا ہے. وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ متاثرہ خاندان کو ہر صورت میں انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جائے.جب کہ دوسری جانب راولپنڈی سے ہی موصول ہونے والی ایک خبر میں بتایا گیا ہے کہ : انٹرنیشنل ڈارک ویب سرغنہ سہیل ایاز کے ہاتھوں زیادتی کا شکار ہونے والے بچے کو دوبارہ اغوا کر لیا گیا ہے.

..

ضرور پڑھیں: پیپلزپارٹی کے ایک اور رہنما نیب کے ریڈار پر آگئے،ڈپٹی چیئرمین سینٹ9 دسمبر کو نیب راولپنڈی طلب

Top