حکومت کو سنبھالنا مشکل، اب کوئی بھی وزیر اعظم بننے کو تیار نہیں۔۔۔!!! چوہدری شجاعت حسین حکومت سے مایوس، اچانک ایسا اعلان کر دیا عمران خان کا آخری حکومتی سہارا بھی چھن گیا

لاہور(قدرت روزنامہ) سربراہ جے یوآئی (ف) مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ چودھری شجاعت نے کل کہا کہ عمران خان نے ایسی صورتحال پیدا کردی کہ آئندہ دو تین ماہ بعد کوئی وزیراعظم بننے کو تیار نہیں ہوگا، کیونکہ پھر ملک کو سنبھالا نہیں جاسکے گا، لہذا اتنا برا حال کرو کہ آئندہ بھی کوئی ملک کو سنبھال سکے . انہوں نے آج اسلام آباد میں سربراہ ق لیگ چودھری شجاعت حسین اور اسپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الٰہی کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نوازشریف کی صحت کے معاملے پر بے حسی کا مظاہرہ کررہی ہے .

ان کو غیرمشروط علاج کے لیے ملک سے باہر جانے دیا جائے. ہم آزادی مارچ کو جاری رکھے ہوئے ہیں. ملک میں اجتماعات کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے، تما مشاہراہوں پر کارکنان اور لوگ جمع ہوتے جارہے ہیں، ان کو واضح ہدایات دی گئی ہیں کہ مسافروں ، ایمبولینسز، مریضو ں کا واضح خیال رکھنا ہے.ایک کمیٹی قائم کی گئی کہ تاکہ وہاں لوگوں کو ریلیف دیا جاسکے.اگر یہ استعفا دے دیتے تو آج یہ دھرنے نہ ہوتے.عوام کے پاس جانا ہمارا جمہوری حق ہے. انہوں نے کہا کہ چودھری شجاعت کی تعریف کروں گا کہ انہوں نے کل کہا کہ عمران خان کے ہوتے ہوئے ایسی صورتحال پیدا ہوگئی ہے، کہ شاید دوتین مہینے کے بعد کوئی ملک کا وزیراعظم بننے کیلئے تیار نہ ہو. کیونکہ اس کے بعد پھر ملک کو سنبھالا نہیں جاسکے گا، لہذا اتنا کرو کہ آئندہ بھی کوئی ملک کو سنبھال سکے.مولانا فضل الرحمان نے الیکشن کے سوال پر کہا کہ الیکشن کا اعلان 2020ء سے بھی پہلے دیکھ رہا ہوں. اس موقع پر مسلم لیگ ق کے صدر اور سابق وزیر اعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ مولانا کے کہنے پر ہزاروں کی تعداد میں لوگ یہاں آئے، ہم یہاں ان کو مبارکباد دینے آئے ہیں. مولانا نے بڑی جماعت ہونا ثابت کردیا ہے .انہوں نے کہا کہ مولانا صاحب نے جمہوریت کی بات کی ہے.ہم ان کے ساتھ ہیں، میں چاہتا ہوں ملک کے اندر ایک ایسا نظام لایا جائے جو عام عوام کی توقعات پر پورا اترے.جبکہ ملک میں ایسی قیادت ہوجو عوام کے تمام مسائل کو حل کرے اور عوام کی امیدوں پر پورا اترے. انہوں نے کہا کہ عمران خان کو کہنا چاہتا ہوں کہ اللہ نے ان کو سربراہ مملکت بنایا ہے تو وہ انصاف کریں، انہیں چاہیے نوازشریف کو جانے دیں،اگر نوازشریف کو کچھ ہوگیا تو یہ کلنگ کا ٹیکہ اپنے سر نہ لیں اور نوازشریف کو جانے دیں.انہوں نے الیکشن کے سوال پر کہا کہ مارکیٹ میں جاکر ٹماٹر کے ریٹ پتا کرلیں. اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں اتنے بڑے دھرنے سے یہ بات ثابت ہوگئی کہ مولانا صاحب واحد اپوزیشن لیڈر ہیں ، ان کے پیچھے ساری جماعتیں کھڑی ہیں، مولانا اسمبلی کے اندراور باہر واحد اپوزیشن لیڈر ہیں ان کے سواکوئی اپوزیشن لیڈر نہیں، انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں اتنا بڑا دھرنا ہوا، لیکن اس کے باوجود گولی نہیں چلی، تشدد نہیں ہوا، ٹریفک بھی چلتی رہی اور نظم وضبط برقراررہا. دھرنے والوں نے صفائی ستھرائی کا خیال بھی رکھا. جبکہ پہلے جو دھرنے ہوتے تھے ان میں سب کچھ ہوتا تھا.

..


Top