single photo

سعودی عرب سے بھی عمران خان کو انکار۔۔۔!!! محمد بِن سلمان وعدہ وفا نہ کر سکے، اچانک وزیر اعظم کو سرپرائز دے دیا

ریاض(قدرت روزنامہ) سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے اپنے دورہ پاکستان کے دوران وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے وعدہ کیا تھا کہ وہ زیادہ سے زیادہ پاکستانی قیدیوں کو رہا کریں گے . تاہم یہ وعدہ جزوی طور پر ہی پُورا کیا گیا ہے .

ضرور پڑھیں: سعودی عرب ، پیشہ ور غیر ملکی ماہرین کو شہریت دینے کا فیصلہ

قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پیپلز پارٹی کی رُکن اسمبلی شازیہ مری کے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ گزشتہ ایک سال کے دوران پاکستانی جیلوں سے 1594 قیدی رہا کیے گئے ہیں.تاہم ابھی بھی ہزاروں پاکستانی معمولی جرائم میں جیلوں میں بند ہیں.

شازیہ مری نے سوال پوچھا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد سے ملاقات کے دوران تین ہزار پاکستانیوں کی رہائی کی درخواست کی تھی، اب تک کتنے رہا کیے گئے ہیں، تو اس کے جواب میں وزیر خارجہ نے بتایا کہ فی الحال 1594 قیدی رہا ہوئے ہیں.وزیر خارجہ کی جانب سے یہ نہیں واضح کیا گیا کہ رہا ہونے والوں میں سے کتنے پاکستانی قیدی اپنی سزا کی مُدت پوری کرنے کے بعد رہا ہوئے ہیں اور کتنے قیدی ولی عہد کے اعلان کے نتیجے میں رہائی پانے میں کامیاب ہوئے ہیں.سو ابھی تک یہ بات وضاحت طلب ہے کہ سعودی ولی عہد نے اپنے وعدے پر کس حد تک عمل درآمد کیا ہے.

وزیر خارجہ نے بتایا کہ پاکستان کی بہتر سفارت کاری کے نتیجے میں متحدہ عرب امارات کی جیلوں سے 1873 پاکستانی قیدیوں کو رہائی مِلی،ملائیشیا سے 782 اور لیبیا سے 167 قیدی آزاد ہوئے. قطر سے 53 کو رہا کیا گیا، امریکی جیلوں میں بند 25 پاکستانیوں کو رہا کروایا گیا، جبکہ چین سے 4 اور ایران سے 2 قیدیوں کو رہائی مِلی ہے. اس لحاظ سے گزشتہ ایک سال کے دوران دُنیا کی مختلف جیلوں میں بند 4637 پاکستانی قیدیوں کو رہا کیا گیا ہے. جو کہ کامیاب اور موثر سفارت کاری کا نتیجہ ہے.

..

ضرور پڑھیں: صرف سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں نے جاری مالی سال کتنے ارب ڈالرمالیت کا زرمبادلہ پاکستان ارسال کیا؟سٹیٹ بینک کا حیرت انگیز انکشاف

Top