single photo

بابری مسجد کا فیصلہ؛وزیراعظم نے دنیا کو انتہا پسند بھارت کا چہرہ دکھانے کا تاریخی موقع گنوا دیا

لاہور (قدرت روزنامہ) آج وزیراعظم عمران خان نے کرتاپور راہداری کا افتتاح کردیا ہے،یہ دن دو حوالے سے اہمیت کا حامل ہے،جہاں آج پاکستان نے سکھ مذہب کا احترام کرتے ہوئے کرتاپور راہداری کا اففتاح کیا وہیں بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد پر مندر تعمیر کرنے کا حکم دے دیا ہے . وزیراعظم نے کرتاپور راہدری کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہمجھے خوشی ہے کہ ہم کرتارپور والا کام کرسکے .

ضرور پڑھیں: بابری مسجد فیصلے کے ذریعے سکھوں کی خوشیوں کے رنگ میں بھنگ ڈالی گئی،پاکستان کا شدید ردعمل

مجھے تو کرتارپورکی اہمیت کا علم ہی نہیں تھا. میں مسلمانوں کو بتاتا ہوں کہ ہم اگر مدینہ کو چار پانچ کلومیٹر دور سے دیکھ سکیں لیکن جانہ سکیں، کتنی تکلیف ہوتی ہے، یہ سکھ برادری کا مدینہ ہے. انہوں نے کہا کہ جو لیڈر ہوتا ہے، اللہ کے سارے پیغمبر لیڈرتھے،

لیڈرہمیشہ انسانوں کو اکٹھا کرتا ہے، نفرتیں نہیں پھیلاتا، نفرت پھیلا کرووٹ نہیں لیتا، نیلسن منڈیلا نے انسانوں کو اکٹھا ان کو ان کی عوام ہمیشہ دعائیں دے گی ، گورے ،حبشی تقسیم تھے، کوئی نہیں سمجھتا تھا کہ افریقہ میں انصاف ہوگالیکن وہ 27سال جیل میں گزارتا ہے اور جنوبی افریقہ کو خون سے بچا لیا. آپ ﷺ نے ساری تعلیمات انسانیت کی بات کی. صوفیاء کرام نے بھی انسانیت کی بات کی ، ہمارے دین اسلام میں ہے، ایک انسان کا قتل ساری انسانیت کا قتل ہے. انہوں نے کہا کہ میں نے مودی سے پہلی بات کی تو کہا کہ ہمارے درمیان بڑا مسئلہ غربت ہے.یہاں خوشحالی آسکتی ہے. ہمارا مسئلہ صرف ایک ہے ، وہ مسئلہ کشمیر ہے، وہ مذاکرات سے حل کیا جاسکتا ہے. انہوں نے کہا کہ مجھے ایک کانفرنس میں منموہن سنگھ ملے انہوں نے کہا کہ ایک مسئلہ کشمیر حل کرنے سے سارا برصغیر اوپر اٹھ سکتا ہے. کشمیر انسانی حقوق کا ایشو ہے.

تاہم یہاں پر قابلِ غور بات یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے بابری مسجد کے حوالے سے بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے پر کوئی ردِعمل نہ دیا.حالانکہ کہ یہ اچھا موقع تھا جب وزیراعظم پاکستان دنیا کو یہ بتا سکتے تھے کہ پاکستان میں اقلیتوں کے حقوق کا کس طرح احترام کیا جاتا ہے اور بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ کیا سلوک کیا جا رہا ہے،وزیراعظم عمران خان دنیا پر یہ بھی واضح کر سکتے تھے کہ ہم تو امن کے خواہاں ہیں. ہم نے سکھ برادری کے لیے کرتار پور راہداری کھول دی لیکن بھارت نے بابری مسجد کی جگہ مندر تعمیر کرنے کا حکم دیا ہے.وزیراعظم عمران خان نے دنیا کو بھارت کے متعصبانہ فیصلے اور بھارت کا انتہا پسند چہرہ دکھانے کا موقع گنوا دیا.یہاں پر یہ بھی سوال اٹھتا ہے کہ مسلمان دوسرے مذاہب کا احترام کرنے میں سب سے آگے،مسلمانوں کے حقوق کا احترام کیوں نہیں کیا جا رہا؟.

..

ضرور پڑھیں: بادشاہی مسجد کا نام تبدیل کرنے ‘بابری مسجد ‘رکھنے کا مشورہ

Top