single photo

استعفیٰ کسی صورت نہیں دونگا ،جوڈیشل کمیشن کے ذریعے دھاندلی کی تحقیقات کرانے کو تیار ہوں،

اسلام آباد(قدرت روزنامہ) و زیر اعظم عمران خان نے واضح کیا ہے کہ استعفیٰ کسی صورت نہیں دونگا ،جوڈیشل کمیشن کے ذریعے دھاندلی کی تحقیقات کرانے کو تیار ہوں، منظم دھاندلی ثابت ہو جائے تو خود عہدہ چھوڑ دوں گا،ہمارے دھرنے اور موجودہ دھرنے میں فرق ہے، بغیر دھاندلی کے ثبوت چند ہزار لوگ لا کر استعفی کی روایت نہیں ڈالنی چاہیے . ذرائع کے مطابق حکومتی کمیٹی کے اراکین نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں کمیٹی نے رہبر کمیٹی سے مذاکرات کی رپورٹ پیش کی .

ضرور پڑھیں: جوڈیشل کمیشن کی جسٹس جمال خان مندوخیل کوبلوچستان ہائیکورٹ کا چیف جسٹس مقرر کرنے کی سفارش

چوہدری پرویز الہٰی کی وزیراعظمسے ون ان ون ملاقات بھی ہوئی،استعفٰی والی بات پر وزیراعظم بھی ڈٹ گئے. ذرائع نے بتایاکہ وزیر اعظم نے کہاکہ مستعفی ہونے کا اپوزیشن کا مطالبہ مسترد کرتے ہوئے کہاکہ استعفیٰ کسی صورت نہیں دوں گا. ذرائع کے مطابق پرویز الہی نے وزیراعظم کو مولانا فضل الرحمن سے چار ملاقاتوں پر بھی اعتماد میں لیا،پرویز الٰہی نے مزاکرات کے عمل کو آگے بڑھانے کے لیے تجاویز بھی دیں، ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نے کہاکہ اپوزیشن کو احتجاج اور مارچ کی اجازت کھلے دل سے دی،جوڈیشل کمیشن کے ذریعے دھاندلی کی تحقیقات کرانے کو تیار ہوں. عمران خان نے کہاکہ منظم دھاندلی ثابت ہو جائے تو خود عہدہ چھوڑ دوں گا، ہم نے دھاندلی پر شواہد دیے، بات نہ سنی جانے پردھرنا دیا، ہمارے دھرنے اور موجودہ دھرنے میں فرق ہے، بغیر دھاندلی کے ثبوت چند ہزار لوگ لا کر استعفی کی روایت نہیں ڈالنی چاہیے.

..

ضرور پڑھیں: بڑے فیصلے متوقع، چیف جسٹس نے جوڈیشل کمیشن کا اجلاس طلب کر لیا

Top