single photo

شہبازشریف،نواز شریف کو اپنا قائد بھی سمجھتے ہیں تو ان کو اس وقت برادر یوسف نہیں بننا چاہئے، جمعیت علماء اسلام نے معنی خیزمشورہ دیدیا

کوئٹہ(قدرت روزنامہ) جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی ترجمان سابق پارلیمنٹرین حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ نواز شریف کو اللہ صحت دے، اس اپوزیشن میں ان کے بیانیہ اور نظریہ ووٹ کو عزت دوکا احترام شہباز شریف کو بھی کرنا چاہئے تھا اگر وہ نواز شریف کو اپنا قائد بھی سمجھتے ہیں تو ان کو اس وقت برادر یوسف نہیں بننا چاہئے . وہ پیر کو اپنی رہائشگاہ جامعہ مطلع العلوم میں الیکڑانک میڈیا سے گفتگو کررہے تھے .

ضرور پڑھیں: کیا شہباز شریف واقعی برادر یوسف کا کردار ادا کر رہا ہے ۔۔۔؟ نامور کالم نگار نصرت جاوید کی ایک حقائق سے بھر پور تحریر

انہوں نے کہا کہ اتحادوں میں شامل پارٹیوں کا احترام اور ان کے خیالات کو اہمیت دینا لازمی ہوتا ہے ہر پارٹی اپنی بساط اورپالیسی کی بنیاد پر حصہ ڈالتی ہے اس لیے ہمیں کسی اور سے شکایت کا حق نہیں لیکن مسلم لیگ (ن) چونکہ نواز شریف کو اپنا قائد قرار دی چکی ہے اس لیے ان کے پیغامات، خط اور بیانیہ سے ہٹ کر رویہ یقینا باعث شکوہ ہیں،

حافظ حسین احمد نے کہا کہ خصوصا مریم اورنگزیب اور احسن اقبال کی جانب سے 31تاریخ کے پروگرام کے منسوخی کا میڈیا میں بیان پورے ملک میں اپوزیشن کے بہی خواہوں کے لیے کوفت کا باعث بنا، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اس کے باوجود مجموعی طور پر ہم تمام اپوزیشن قائدین اور پارٹیوں کے ممنون و مشکور ہیں جنہوں نے ان حالات میں بھرپور انداز میں تعاون فرمایا، ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی تمام پارٹیاں حکومت کی رخصتی اور از سرنو صاف و شفاف انتخابات کے انعقاد، آئین کی بالادستی اور آئین میں طے شدہ اسلامی دفعات کے تحفظ پر یکسو ں ہیں. اس اپوزیشن میں ان کے بیانیہ اور نظریہ ووٹ کو عزت دوکا احترام شہباز شریف کو بھی کرنا چاہئے تھا اگر وہ نواز شریف کو اپنا قائد بھی سمجھتے ہیں تو ان کو اس وقت برادر یوسف نہیں بننا چاہئے.

..

Top