خالصتان 2020 میں دنیا کے نقشہ پر ابھر کررہے گا ،امریکہ،برطانیہ سمیت دنیا بھر کی سکھ کمیونٹی نے بھارت کو چیلنج کردیا

جنیوا(قدرت روزنامہ)خالصتان 2020 میں دنیا کے نقشہ پر ابھر کررہے گا،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ بات امریکہ ، برطانیہ سمیت دنیا بھر سے آئے ہوئے سکھ کمیونٹی نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ہیڈکوارٹر کے سامنے مظاہرے کے دوران کہی . یورپ بھر میں مقیم کشمیری کمیونٹی نے بھی ان سے مکمل یکجہتی کا اظہار کیا ، مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سکھ کمیونٹی نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق سے مطالبہ کیا کہ بھارت میں مقیم اقلیتوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں 88 روز سے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کے مظالم اور کرفیو نافذ کرکے لوگوں کو گھروں میں محصور کر رکھاہے .

ضرور پڑھیں: خواجہ آصف کا کپتان کو مذہب کو آڑ میں طعنہ دینا مہنگا پڑ گیا! ’’یہ خود امریکہ میں پینٹ کوٹ پہن کر اپنے آپ کو لبرل کہتے ہیں،اور کہتے ہیں ہمیں بچاؤ۔ ‘‘ وزیراعظم نے خواجہ جی کی تاریخی چھترول کرڈالی

خواتین کی عصمت دری کی جارہی ہے اوربچوں پر بھی مظالم ڈھائے جارہے ہیں، بھارت کی اپوزیشن جماعتوں سمیت کسی کو مقبوضہ کشمیر جانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے.لہٰذا ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ فوری طور پر مقبوضہ کشمیر سے کرفیو ختم کیا جائے اور غیر ملکی مبصرین کو وہاں جانے کی اجازت دی جائے.

..

ضرور پڑھیں: امریکہ،چین،برازیل کے شہری کوروناسے غیرمحفوظ،یورپ میں داخلہ بند


Top