single photo

آزادی مارچ سے نمٹنے کےلئے وزارت داخلہ کا پلان سامنے آ گیا

اسلام آباد(قدرت روزنامہ)وزارت داخلہ کی جانب سے آزادی مارچ سے نمٹنے کیلئے اسلام آباد مکمل طور پر سیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے،صوبوں سے پولیس کی اضافی نفری طلب کر لی گئی . نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ وزارت داخلہ نے مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ سے نمٹنے کےلئے پلا ن تیار کر لیا ہے، 27اکتوبرسے اسلام آبادکی طرف آنےوالے تمام راستے بندکرنےکافیصلہ کیا گیا ہے .

ضرور پڑھیں: جے یو آئی کے آزادی مارچ میں کنٹینر سے نوجوان کی ہلاکت،رہبرکمیٹی،فضل الرحمان،شہبازشریف ،بلاول و دیگر کیخلاف اندراج مقدمہ کی درخواست قابل سماعت ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ

ریڈزون مکمل سیل کرکے تمام داخلی اورخارجی راستے بندکیے جائیں گے ،

اسلام آبادکے تمام داخلی راستے کنٹینرزلگاکربندکیے جائیں گے.27اکتوبرسے موٹرویزاورجی ٹی روڈبند کردیئے جائیں گے،آزادی مارچ کے دوران جی ٹی روڈکو خیرآبادکے مقام پربندکیاجائےگا،نوشہرہ میں خیرآبادکے مقام پراٹک پل کے دونوں اطراف کنٹینرزرکھ دیئے گئے ہیں. ذرائع کے مطابق دھرنے سے قبل مولانافضل الرحمان کونظربندکرنے پربھی غورجاری ہے،آزادی مارچ مہم چلانےوالے کارکنوں کی گرفتاریاں بھی شروع کی جائیں گی،اسلام آبادسمیت تمام اضلاع میں گرفتاریوں اورچھاپوں کاسلسلہ جاری رکھا جائے گا،

کشمیر، پنجاب، بلوچستان حکومت سے اضافی پولیس نفری طلب کی گئی ہے،وزارت داخلہ کی جانب سے اضافی نفری کیلئے دارالحکومت میں مختلف سرکاری عمارات کو خالی کرانے کیلئے احکامات جاری کیے گئے. جبکہ نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق وزارت داخلہ کی جانب سے جے یو آئی (ف) کے آزادی مارچ سے نمٹنے کےلئے کنٹرول روم بنانے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے، کنٹرول روم سے پنجاب، وفاقی دارالحکومت اور خیبرپختونخوا کو کنٹرول کیا جائےگا،پنجاب، کے پی کے چیف سیکرٹریز اور چیف کمشنراسلام آبادکنٹرول روم سے رابطے میں رہیں گے،تینوں صوبوں کے آئی جیز بھی کنٹرول روم کے احکامات کو فالو کریں گے.

..

ضرور پڑھیں: آزادی مارچ مولانا فضل الرحمان اور اپوزیشن جماعتوں کے لیے وبال جان بن گیا

Top