single photo

اپنے بیوی بچوںکوتنگی میں ڈال کردوسروں کی شادیوں پرپیسہ لٹانا

      میلبورن(قدرت روزنامہ)مولاناطارق جمیل نے آسٹریلوی شہرمیلبورن میں بیان دیتے ہوئے کہاکہ جن لوگوں کے بچے ملک سے باہرکمانے کے لیے جاتے ہیں توان کے والدین اوررشتہ دارسمجھتے ہیں کہ ہمارابچہ تواب سونے کی کان میںپہنچ گیااورپھربچوں سے فرمائشیں کرتے ہیں کہ تیری بہن کی شادی ہے پیسے بھیجو،تیری بھانجی ، بھتیجی کی شادی ہے پیسے بھیجوانہیں معلوم نہیں ہوتاکہ پیسے کماناغیرملک میں کتنامشکل کام ہے میں ان سے کہتاہوں کہ پہلے اپنے بیوی بچوں کودیکھوجن کے والدین ان کیساتھ رہتے ہیں ان سے کہتاہوں کہ وہ ٹائم نکال کراپنے والدین کی خدمت کرو . انہوں نے کہاکہ میں یہ نہیں کہتاکہ رشتہ داروں پرخرچ نہ کرولیکن سب سے پہلاحق آپ کے بیوی بچوں اوروالدین کاہے .

اللہ تعالیٰ نے حدودمقررکردی ہیں بچے کی ذمہ داری ہے کہ ماں باپ کواپنی عزت دے ،بیوی کواپنی عزت دے.اگرآپ کے پاس اپنی اولادبیوی بچوں پرخرچ کرنے کے بعدپیسہ بچتاہے توآپ اپنی بھتیجی ،بھانجی یادوسرے رشتہ داروں پرخرچ کریںلیکن اس طرح بچوں کوتنگی میں ڈال پراپنے آپ کوتنگی میں ڈال کرڈبل ڈبل شفٹیں لگاکراپنے آپ پریہ ظلم نہ کریں.

..

Top