single photo

’’ خدارا ہماری مدد کریں۔۔۔!!!‘‘ نہ سعودی ولی عہد کا طیارہ خراب ہوا اور نہ ہی اسرائیلی ایجنسیوں نے طیارے کا سسٹم ہیک کیا ۔۔۔ دوبارہ امریکہ بُلا کر ’ امریکی ہائی آفیشل ‘ نے عمران خان سے کیا درخواست کی؟کئی دنوں بعد بالاخر بلی تھیلے سے باخر آگئی

اسلام آباد(قدرت روزنامہ) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اجلاس کے بعد وزیر اعظم کے طیارے نے اُڑان بھری، اور جیسے ہی کینیڈا کی حدود میں پہنچا تو طیارے کا رخ واپس امریکہ موڑ دیا گیا جس کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے امریکہ میں ایک روز مزید قیام کیا اور وہاں سے اگلے دن پاکستان کے لیے روانہ ہوئے، اس واقعے کے بعد مختلف قیاس آرائیاں گردش کرنا شروع ہوئیں، بعض افواہیں تھیں کہ عمران خان کے طیارے کو ہائی جیک کرنے کی کوشش کی گئی، بعض افواہیں گردش کرنا شروع ہوئیں کہ طیارے میں فنی خرابی تھی ، طرح طرح کی افواہوں نے پاکستانیوں کو ورطہ حیرت میں ڈال رکھا ہے لیکن وزیر اعظم عمران خان کا طیارہ واپس کیوں موڑا گیا تھا؟ بالاخر اصل کہانی سامنے آگئی ہے، . میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان اپنے وفد کے ہمراہ پاکستان واپسی کے لیے امریکہ کی حدود سے نکل چکے تھے کہ واشنگٹن سے دوبارہ اواپسی کی درخواست کی گئی، وزیر اعظم عمران خان کو امریکہ واپس بلا کر انہیں ہدایات کی گئیں کہ وہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان تعلقات کی بہتری کے لیے اپنا کردار ادا کریں، اگر وزیر اعظم عمران خان ایران اور سعودی عرب کے درمیان مصالحت کرانے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو پھر انہیں امریکہ اور ایران کے درمیان مذاکرات کا ٹاسک سونپا جائے گا .

دوبارہ واپس بلانے کے بعد وزیر اعظم عمران خان اور امریکہ کی ہائی آفیشل شخصیات کی واشنگٹن میں دوبارہ ملاقات ہوئی . ٹاسک ملنے کے بعد وزیر اعظم عمران خان کمرشل جہاز کے ذریعے امریکہ سے سعودی عرب پہنچے جہاں پر لاؤنج میں ہی انکی سعودی عرب کی ہائی آفیشل شخصیات سے ملاقات ہوئی . اس ملاقات میں عمران خان سے درخواست کی گئی کہ وہ سعود عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی کم کرانے میں اپنا کردار ادا کریں، پاکستان واپسی پر عمران خان نے چین جانے کا فیصلہ اس لیے کیا کیونکہ پاکستانی وزیر اعظم چاہتے تھے کہ وہ خطے میں امن و امان کی صورتحال کے حوالے سے دوست ملک چائینہ کو بھی اپنے اعتماد میں لیں.

..

Top