single photo

2 ملزمان نے 19 سالہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعداسی کے کپڑوں سے پھانسی دے دی، لڑکی کی جان پھر بھی بچ گئی مگر کیسے؟

رائے پور(قدرت روزنامہ) بھارتی ریاست چھتیس گڑھ میں 2 ملزمان نے 19 سالہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد متاثرہ کو اسی کے کپڑوں کا پھندا بنا کر درخت سے پھانسی دے دی ، خوش قسمتی سے پھندا ڈھیلا ہونے کے باعث لڑکی نیچے گر گئی اور اس کی جان بچ گئی . چھتیس گڑھ کے ضلع ’ کوریا‘ میں 19 سالہ لڑکی گھر پر اکیلی تھی، اسی دوران ملزمان ونود اور سورج پنکی گھر پر آئے اور اسے اغوا کرکے جنگل میں لے گئے .

وہاں ملزمان نے پہلے تو لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا جس کے بعد اسی کے کپڑے پھاڑ کر ان کا پھندا بنایا اور اسے برہنہ حالت میں پھانسی دے کر فرار ہوگئے.خوش قسمتی سے کپڑوں سے بنایا گیا پھندا ڈھیلا تھا جس کے باعث لڑکی نیچے گر گئی اور اس کی جان بچ گئی، متاثرہ لڑکی کا کمیونٹی ہیلتھ سنٹر میں علاج جاری ہے. ضلع کوریا کے ایس پی وویک شکلا کے مطابق متاثرہ لڑکی کی شکایت پر مقدمہ درج کرکے ملزمان کو فوری گرفتار کرلیا گیا. متاثرہ لڑکی کے والد نے بتایا کہ ملزمان نے 2 سال پہلے بھی اس کی بیٹی کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی تھی جس کے باعث انہیں 3 ماہ جیل کی سزا ہوئی تھی.

..

Top