single photo

کراچی : خاتون شرمناک الزام میں گرفتار ۔۔۔۔ الزام بھی ایسا جو اچھے اچھوں پر لگ جائے تو شرم سے پانی پانی ہو جائیں

کراچی (قدرت روزنامہ) ایف آئی اے کے ونگ سائبر کرا ئم کی جانب سےکراچی میں پہلی بار سائبر کرائم میں ملوث ایک خاتون کو گرفتار کر لیا گیا ہے . ترجمان فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کے مطابق ایف آئی اے کراچی اور پی ٹی اے کے مشترکہ چھاپے کے نتیجے میں سائبر کرائم میں ملوث خاتون کو گرفتار کیا گیا ہے .

ضرور پڑھیں: مرد بن کر نابالغ لڑکیوں کا ریپ کرنے والی خاتون، پولیس پکڑنے آئی تو شوہر نے ایسا کام کردیا کہ جان سے ہی ہاتھ دھو بیٹھا

جو کہ کراچی کے علاقے ناظم آباد نمبر 2 کے ایک گھر میں رہائش پزیر تھی . جب اس کے گھر پر چھاپہ مارا گیا تو اس کے پاس سے 175 موبائل سم کارڈ 16 موبائل فون 3 لیپ ٹاپ سمیت انٹرنیٹ سروسز ڈیوائسز بھی بر آمد ہوئیں.

 

ایف آئی اے کے ترجمان کے مطابق ’سدرہ کلیم ‘ نامی یہ خاتون اس سارے نیٹ ورک کی سرغنہ ہے جس کو گرفتار کر کے خاتون کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے.خاتون کے خلاف جو دفعات لگائی گئی ہیں اس پی ای سی اے 2016 ء کی دفعات 13،14،16 اور 17 جبکہ پاک ٹیلی کام ری آرگنائزیشن ایکٹ 1996ء کی دفع 31 اور پاکیستان پینل کوڈ کی دفعات 420 اور 109 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے.ترجمان ایف آئی اے کے مطابق پاکستان میں ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ کوئی خاتون غیر قانونی نیٹ ورک چلا رہی ہے جبکہ اس بات کا بھی خدشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ اس نیٹ ورک میں بااثر افراد بھی ملوث ہو سکتے ہیں. مقدمے میں ملوث دوسرے ملزمان عامر زمان علی آصفی، سا جود سمیت دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے بھی چھاپے مارے جارہے ہیں.

 

ترجمان ایف آئی اے کے مطابق خاتون نےسائبر کرائم کے ذریعے سرکاری خزانے کو بڑا نقصان پہنچایا ہے.لیکن ترجمان نے اس حوالے سے اور معلومات نہیں بتائیں.یاد رہے پاکستان کے ایوانِ بالا کے بعد قومی اسمبلی نے بھی 11 اگست کو الیکٹرانک جرائم کے تدارک کے لیے سائبر کرائم بل کی منظوری دی تھی. اس بل میں ایسے 23 جرائم کی وضاحت کی گئی تھی. جن پر ضابطہ فوجداری کی 30 دفعات لاگو ہو سکیں گی. سائبر کرائم کی ایک عام تعریف یہ بیان کی جاتی ہے کہ ہر ایسی سرگرمی جس میں کمپیوٹرز یا نیٹ ورکس کو ایک ہتھیار کے طور پر استعمال کرتے ہوئے کسی کو ہدف بنایا جائے یا مجرمانہ سرگرمیاں کی جائیں یا انہیں مخصوص فریقین کی جانب سے خلاف قانون سمجھا جائے.اس میں مزہبی منافرت تفرقہ بازی بچوں کی غیر اخلاقی تصاویر شائع کرنا سمیت موبایل فون اور مو ائل فون سموں کی غیر قانونی فروخت بھی شامل ہے .

..

ضرور پڑھیں: آسٹریلیا کے ائیرپورٹ پربوائے فرینڈ کی گودمیں بیٹھی خاتون پرعملے کی تنقید

Top