single photo

عدالت میں کیس کی سماعت کے دوران مریم نواز کیساتھ سیلفیاں

      اسلام آباد (قدرت روزنامہ) لاہور کی احتساب عدالت نے چوہدری شوگر ملز کیس کی سماعت کے دوران لوگوں کی مریم نواز کے ساتھ سیلفیوں پر برہمی کااظہار کرتے ہوئے کمرہ عدالت میں موبائل فون بند کرا دیئے . لاہور کی احتساب عدالت میں مسلم لیگ نون کی نائب صدر مریم نواز اور ان کے کزن یوسف عباس کے خلاف چوہدری شوگر ملز کیس کی سماعت ہوئی، جس میں عدالت نے دونوں ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14 دن کی توسیع کردی .

ضرور پڑھیں: ای سی ایل سے نام نکالنے کیلئے مریم نواز کابھی ہائیکورٹ سے رجوع،سماعت مقرر ہوگئی

کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے مریم نواز اور یوسف عباس کو روسٹرم پر طلب کیا، مگر رش ہونے پر مریم نواز کو بیٹھےرہنے کا کہا اور ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ سیکیورٹی کا ایشو ہے، رش نہ لگایا جائے. مریم نواز کے وکلاء نے سائیڈ روم میں مریم نواز سےمشاورت کی اجازت طلب کی جسے عدالت نےمنظور کرلیا اور خبردار کیا کہ غیر متعلقہ افراد وہاں گئے تو ذمے دار وکلاء ہوں گے. عدالت میں کیس کی سماعت کے دوران لوگوں کا شدید رش تھا اور لوگ مسلم لیگ نون کی نائب صدر مریم نواز کے ساتھ سیلفیاں بناتے رہے جس پر عدالت نے اظہارِ برہمی کیا اور موبائل فون بند کرادیئے. اس موقع پر احاطہ عدالت میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ جس غلط طریقے سے یہ حکومت آئی تھی، اسی طریقے سے جائے گی. انہوں نے کہا کہ جیل میں مجھ سے موبائل فون برآمد ہونے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، آئی جی جیل نے بھی اس کی تردید کی ہے، جس طرح جھوٹ کے پاؤں نہیں ہوتے، اسی طرح دھاندلی زدہ حکومت کےبھی پاؤں نہیں ہوتے. واضح رہے کہ عدالت نےسماعت کے بعد مریم نواز اور یوسف عباس کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14 دن کی توسیع کرتے ہوئے انہیں23 اکتوبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا .

..

ضرور پڑھیں: نہ کوئی سیاسی بیان نہ کوئی طنزیہ ٹویٹ۔۔۔۔مریم نوازآجکل خاموش کیوں ہیں؟ شیخ رشید نے معنی خیز بات کہہ ڈالی

Top