single photo

نیب ٹیم کا کراچی میں کے ایم سی کے سابق ڈی جی پارکس لیاقت علی کے گھر پر چھاپہ

کراچی (قدرت روزنامہ) جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں کے ایم سی کے سابق ڈی جی پارکس لیاقت علی کے گھر نیب کی ٹیم نے چھاپہ مارا . تفصیلات کے مطابق نیب ذرائع نے بتایا کہ چھاپے کے دوران گھر سے سونے کے بٹن ، کف لنکس، جیولری، اسلحہ ، آٹھ گاڑیاں، پراپرٹی فائلز برآمد ہوئیں .

نیب نے کراچی کے علاقہ پی ای سی ایچ میں کارروائی کی.

یہ کارروائی نیب پنڈی نے نیب کراچی کی مدد سے کی. نیب ذرائع کے مطابق کارروائی کے دوران برآمد ہونے والی اشیا کا 8 صفات پر مشتمل میمو بنایا گیا. گھر سے چار فٹ اور چھ فٹ کے دو لاکرز برآمد ہوئے. ایک لاکر میں سے قیمتی ہیرے ملے ، دوسرے لاکر کو کھولا جا رہا ہے . کے ایم سی کے سابق ڈی جی پارکس کا گھر ریمورٹ کنٹرول پر ہے

جبکہ گھر میں دو مرلے کے باتھ رومز ہیں. نیب ذرائع نے بتایا کہ کارروائی کے دوران گھر سے کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں ، بانڈز اور دستاویزات برآمد ہوئیں . دستاویزات میں کراچی اور لاہور کے بنگلوز کی دستاویزات بھی شامل ہیں. نیب ذرائع نے بتایا کہ چھاپے کے دوران 200 اشیا کو قبضے میں لیا گیا ہے. نیب نے برآمد کی جانے والی اور قبضے میں لی جانے والی اشیا کی فہرست بھی مرتب کر لی ہے. نیب نے جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں تحقیقات کا دائرہ کار مزید وسیع کر دیا ہے. یاد رہے کہ لیاقت علی کو گذشتہ روز گرفتار کیا گیا تھا.

قومی احتساب بیورو نے فریئر ہال میں کے ایم سی کے دفتر پر چھاپہ مار کے مئیر کراچی کے مشیرِ باغیات کو گرفتار کیا تھا. لیاقت قائم خانی کو میئر کراچی وسیم اختر نے مشیر باغات تعینات کیا تھا. ان کی ریٹائرمنٹ کے بعد کے ایم سی میں بطور مشیر رکھا گیا .لیاقت قائم خانی پر باغ ابن قاسم کی تزئین و آرائش کے نام پر کروڑوں روپے کی غبن کا الزام ہے.

..

Top