single photo

مجھے اس بات کا زندگی کی آخری سانس تک دکھ رہے گا ۔۔۔۔نواز شریف نے اپنا دکھڑا بیان کر دیا

اسلام آباد(قدرت روزنامہ)کو ٹ لکھپت جیل میں پابند سلاسل سابق وزیرا عظم، مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف نے کہا ہے کہ کلثوم نواز نے، مشرف کی آمریت کو للکارا . جمہوری قوتوں کو اکٹھا کر کے تحریک چلائی کلثوم کی موت ہم پر قیامت بن کر گزر گئی .

ضرور پڑھیں: پاکستان کی اس نامور اداکارہ کی زندگی کی اصل کہانی جو آج کل “حاجن” کہلاتی ہے ۔۔۔۔۔

اپنی اہلیہ کی پہلی برسی کے موقع پر سوانح عمری کے ایک باب ،بہت سا تنہا ہو گیا میں، میں کہاہے کہ بے شک زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ میں ہے. اس کے فیصلے وہی ذات باری تعالیٰ سمجھتی ہے. بندوں کو ہرحال میں صبر اور شکر کی تلقین کی گئی ہے. انہوں نے کہا کہ کلثوم کی موت کا دکھ زندگی کی آخری سانس تک رہے گا لیکن اللہ نے اسے بس اتنی ہی زندگی دی تھی. ہمارے پاس اللہ کی رضا پر صبر کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں. میرا اور کلثوم کا سینتالیس برس کا ساتھ تھا. نواز شریف نے کہا کہ میں نے کلثوم کو ہمیشہ صابر، شاکر اور باہمت پایا. وہ بہت حوصلے اور بڑی سمجھ بوجھ والی خاتون تھی.انہوں نے کہا کہ سیاست اسے کبھی پسند نہیں رہی. 1980 کی دہائی میں جب میں پہلے پہل سیاست میں قدم رکھ رہا تھا تو بھی کلثوم کی رائے اس کے حق میں نہ تھی.سابق وزیر اعظم نے کہا کہ وہ اپنی اس رائے پر ہمیشہ قائم رہی. اپنے بیٹوں کو بھی سیاست کے میدان سے دور رکھا. مشرف کی ڈکٹیٹرشپ کے دوران جب ہمیں جیلوں میں ڈال دیا گیا تو کلثوم نے بڑء جراأت اور بہادری سے آمریت کو للکارا.انہوں نے کہا کہ اس نے جمہوری قوتوں کو اکٹھا کرکے ایک کامیاب تحریک کی شکل دی. یہاں تک کہ آمر کے ارادے کمزور پڑ گئے. سہیل وڑائچ کا کہنا ہے کہ کلثوم نواز ملکی سیاست کی پیچیدگیوں کو سمجھتی تھیں. وہ سنہ 2017 میں لاہور سے قومی اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں کامیاب ہوئیں تھیں تاہم اس سے پہلے ہی انہیں بیماری نے آن لیا. وہ علاج کے لیے لندن جانے کے بعد واپس نہ لوٹ پائیں. وہ مشہورِ زمانہ پہلوان گاما کی نواسی بھی تھیں. ان کے چار بچے ہیں جن میں حسن نواز، حسین نواز، مریم نواز اور عصمہ نواز شامل ہیں. کلثوم نواز کا شریف خاندان کے تمام اہم فیصلوں میں بنیادی کردار رہا. سہیل وڑائچ کا کہنا ہے کہ مریم نواز نے خود انھیں ایک انٹرویو کے دوران بتایا تھا کہ شریف خاندان میں بیگم کلثوم نواز کا سیاسی تجزیہ اور لوگوں کے بارے میں ان کی رائے ہمیشہ درست ثابت ہوتی تھی. سہیل وڑائچ کہتے ہیں کہ نواز شریف کے لیے ذاتی طور پر اس دھچکے سے باہر آنا آسان نہ ہو گا.

..

ضرور پڑھیں: ‘کلبھوشن یادیو کی زندگی پر مبنی فلم کا حصہ نہیں’

Top