single photo

محرم الحرام میں پاکستان سٹاک ایکسچینج میں تیزی، ڈالر کی قدر میں کتنی کمی ہوئی؟ بڑا تہلکہ

کراچی(قدرت روزنامہ)سٹاک ایکسچینج کی ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی گئی، ایک ہفتے میں 100 انڈیکس میں 2.7 فیصد اضافہ ہوا اورانٹر بینک میں ڈالر 53 پیسے سستا ہوا . تفصیلات کے مطابق ایک ہفتے میں 100 انڈیکس 795 پوائنٹس اضافے سے 30467 کی سطح پر بند ہوا، شئیرز کی قیمت بڑھنے پر مارکیٹ کپیٹلائزئشن 105 ارب روپے اضافے سے 6187 ارب روپے ہوگئی،مہنگائی کی روح توقعات سے کم رہنے پر خریداری کا رجحان دیکھا گیا .

پاکستان سٹاک ایکسچینج کی جاری ہونے والی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے میں 100 انڈیکس میں 2.7 فیصد اضافہ ہوا،100 انڈیکس 795 پوائنٹس اضافے سے 30 ہزار467 کی سطح پر بند ہوا، شیئرز کی قیمت بڑھنے پر مارکیٹ کپیٹلائزیشن 105 ارب روپے اضافے سے 6 ہزار187 ارب روپے ہو گئی. دوسری جانب ڈالر کی ہفتے وار رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے میں انٹر بینک میں ڈالر 53 پیسے سستا ہوا، ایک ہفتے میں انٹر بینک میں ڈالر 156.85 سے کم ہوکر 156.32 پیسے ہر بند ہوا جبکہ اوپن ایکسچینج میں ڈالر 50 پیسے سستا ہوا. جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم کی جانب سے وزیراعلی پنجاب کی کارکردگی پر اعتماد کا اظہار کیا گیا ہے، پنجاب حکومت کے انقلابی اقدامات کے بارے میں عوام کو آگاہ کیا جائے گا،عدالت نے انسانی خواہشات کے مطابق فیصلے نہیں کئے عدالت کے فیصلہ سے ثابت ہواکہ وہ آزاد ہیں اور امید ہے کہ اب (ن) لیگ عدالتوں پر انگلیاں نہیں اٹھائے گی،جو پیسے دے گا وہی باہر جائے گا لیکن یہ بات بھی واضح ہے کہ فی الحال کوئی ڈیل نہیں ہو رہی ہے، کوئی ہسپتال پرائیویٹائز نہیں کیا جا رہا، پنجاب کا شعبہ صحت میں اصلاحات کا آرڈیننس لے کر آئے ہیں، حکومت کے صحت کے شعبے میں عام آدمی کو تمام سہولتیں فراہم کرنا ترجیح ہے، پنجاب حکومت کی ایک سالہ کارکردگی عوام تک پہنچائی جائے گی،ہسپتالوں میں مشینوں کی خرابی کی صورت میں متعلقہ بورڈ فوری فیصلہ کرے گا، اپنی ذمہ داریاں ادا نہ کرنے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے گی.صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد اور صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم نے ایک بار پھر واضح کردیا ہے کہ عثمان بزدار ہی وزیراعلی پنجاب رہیں گے، اب اس حوالے سے کسی کو کوئی شک نہیں ہو نا چاہئے.انہوں نے کہا کہ نعیم الحق پارٹی کے سنیئر رہنما ہیں وہ حکومت میں کوئی بھی عہدہ لے سکتے تھے لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا اور اب بھی وہ پارٹی کی خدمات سر انجام دے رہے ہیں.انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے وژن کے مطابق پنجاب میں بھی مختلف اصلاحات کی گئی ہیں، پنجاب حکومت کی ایک سالہ کارکردگی عوام تک پہنچائی جائے گی،ہسپتالوں میں مشینوں کی خرابی کی صورت میں متعلقہ بورڈ فوری فیصلہ کرے گا، ہماری ترجیح مریضوں کو اچھا علاج اور سہولتیں فراہم کرنا ہے. اس موقع پر وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ حکومت پنجاب کے نئے ایکٹ کو سمجھنے کی ضرورت ہے،نئے ایکٹ کے تحت ہسپتالوں کے نظام کی بہتری کیلئے باقاعدہ ایک کمیٹی بنائی جائے گی.انہوں نے کہا کہ ماضی میں کبھی ہسپتالوں اور ڈاکٹرز کا آڈٹ پرفارمنس نہیں ہوا لہٰذا مستقبل اپنی ذمہ داریاں ادا نہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی. انہوں نے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں میں مفت علاج ہے، پرچی کی کوئی فیس نہیں.صوبائی وزیراطلاعات وثقافت میاں اسلم اقبال نے کہا ہے کہ عام آدمی کو ہسپتالوں میں معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے اور حکومت اپنی یہ ذمہ داری ہر قیمت پر نبھائے گی اسی مقصد کیلئے محکمہ صحت میں انقلابی نوعیت کی اصلاحات لائی جارہی ہیں.کوئی ہسپتال پرائیویٹائز نہیں کیا جارہا بلکہ ہسپتالوں میں معیاری سہولتوں کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں.صوبائی وزیر نے کہا کہ سکینڈری ہیلتھ کے شعبے میں ایک بیڈ پر سالانہ 45لاکھ جبکہ پرائمری ہیلتھ میں ایک بیڈ پرسالانہ 35لاکھ روپے خرچ ہوتے ہیں اوراگر اس کے ثمرات عام مریض تک نہیں پہنچنے تو اس کا کوئی فائدہ نہیں.انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا ہر قدم عام آدمی کی فلاح کیلئے اٹھ رہا ہے اور وسائل کی ایک ایک پائی غریب عوام کے معیار زندگی کو بہتر بنانے پر ہی صرف ہوگی.

..

Top