single photo

نیابھارت بننے کی مبارکباد دینے پر بھارتی فلمساز کو دھمکیاں دی جانے لگیں

ممبئی(قدرت روزنامہ)) بھارتی ہٹلر مودی کے خلاف بولنے والے ہندو بھی اپنے ملک میں محفوظ نہیں ہیں . دھمکیاں ملنے پر فلمساز انوراگ کشپ نے ٹویٹر اکاو¿نٹ کوہی ڈیلیٹ کر دیا ہے .

ضرور پڑھیں: ’مجھے پاکستان سے پیارہے ‘ کئی سپرہٹ فلمیں بنانے والے بھارتی فلمساز کاغیرمتوقع بیان

انہوں نے کہا تھا کہ کہ ٹھگوں کی حکومت اور ٹھگ بن کے ہی زندگی گزارنا پڑے گی،اس نئے بھارت پر تمام بھارتیوں کو مبارکباد ہے.

تفصیلات کے مطابق بھارتی فلمساز نے انوراگ کشپ نے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ مودی مخالف موقف پر میرے والدین اور بیٹی کو دھمکیاں دی گئیں. عقل اور دلیل کی بنیاد پر بات کرنا بھارت میں ناممکن بن گیاہے.انہوں نے لکھا کہ ٹھگوں کی حکومت اور ٹھگ بن کے ہی زندگی گزارنا پڑے گی. اس نئے بھارت پر تمام بھارتیوں کو مبارکباد ہے .

واضح رہے کہ انوراگ کشپ کا شمار بھارت کی ان شخصیات میں ہوتا ہے جنہوں نے گزشتہ ماہ 23 جولائی کو مودی کو خط لکھ کر ان سے درخواست کی تھی کہ وہ ملک میں بڑھتی ہوئی بدامنی، ہجوم کے ہاتھوں لوگوں کے قتل کے بڑھتے واقعات کی روک تھام کیلئے کردار ادا کریں.

..

ضرور پڑھیں: بھارتی فلمساز پاکستانی فنکاروں کو بی اور سی کلاس کام دیتے ہیں، مہوش حیات

Top