single photo

کارن فلیکس اور خود لذتی کے درمیان کیا تعلق ہے؟

اسلام آباد (قدرت روزنامہ)کارن فلیک دنیا بھر میں مقبول ترین ہلکی پھلکی غذا کی حیثیت حاصل کرچکے ہیں ،مگر انہیں کھاتے ہوئے شاید کبھی بھی آپ کے ذہن میں یہ خیال نہیں آیا ہوگا کہ ڈاکٹر کیلگ کے مطابق ان سے لطف اندوز ہونے کے دوران آپ خود لذتی کی عادت کا علاج بھی کررہے ہوتے ہیں. جان ہاروے کیلگ ایک امریکی ڈاکٹر تھے اور وہ خود لذتی کے فعل کو نوجوانوں کیلئے انتہائی خطرناک قرار دیتے تھے.

ان کے خیال میں یہ فعل درجنوں خطرناک بیماریوں کا باعث بنتا تھا ور وہ اس کے بداثرات کے بارے میں اکثر سوچ بچار کرتے رہتے انیسویں صدی کے اواخر میں ڈاکٹر کیلگ نے بالآخر ایک ایسی غذا تیار کرلی جس کے بارے میں ان کا دعویٰ تھا کہ یہ خود لذتی کی عادت سے نجات دلاتی ہے. وہ کہتے تھے کہ گوشت اور اورکہ گوشت اور اور دیگر بھرپور غذائیں نوجوانوں کو خودلذتی پر ابھارتی ہیںلہٰذا انہوں نے خاصی تحقیق کے بعد ایک ایسی غذا تیار کی جو سادہ ترین اور خود لذتی کا آسان توڑ تھی.یہ غذا ’پاپ کارن‘ ہی تھے،

جو آج ساری دنیا میں انتہائی شوق سے کھائے جاتے ہیں، اور انہیں ایجاد کرنے والے ڈاکٹر کیلگ کے نام سے مشہور برانڈ Kellogg’s تو ہر ملک میں پسند کیا جاتا ہے. اس بات کے تو شواہد موجود نہیں کہ ڈاکٹر کیلگ پاپ کارن سے خود لذتی کا تدارک کرپائے، البتہ وہ دنیا کو ایک انتہائی مزیدار، ہلکی پھلکی اور سادہ غذا ضرور دے گئے.

. .

ضرور پڑھیں: کیا خود لذتی کبیرہ گناہ ہے

ضرور پڑھیں: کارن فلیکس اور خود لذتی کے درمیان کیا تعلق ہے؟ایسا انکشاف کہ جان کر تمام مرد چکرا جائیں گے

Top