single photo

علی محمد خان کی سعودی سفیر سے ملاقات، ان سے اپنے حلقے کیلئے کیا مانگ لیا ؟ دیکھ کر سوشل میڈیا پر پاکستانیوں کو شرم آ گئی

مردان(قدرت روزنامہ)پاکستان تحریک انصا ف کی حکومت کے آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات مکمل ہو گئے ہیں اور پراگرام کے تحت پاکستان کو چھ بلین ڈالر کا قرض ملے گا جس سے معیشت کو بڑا سہارا میسر آئے گا تاہم اس سے قبل پاکستان کو معاشی بحران سے نکالنے کیلئے سعودی عرب اور چین نے بھی اہم ترین کردار ادا کیا . تفصیلات کے مطابق سعودی عرب ہر مشکل وقت میں پاکستان کے ساتھ کھڑا ہوا اور بھر پور تعاون کیا تاہم پی ٹی آئی کے وزیر برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر سے ملاقات کی اور ان کے ساتھ اپنے حلقے کی مشکلات پر مشاورت اور گفتگو بھی کی .

اس موقع پر محمد علی خان نے سعودی سفیر کو ایک خط بھی پیش کیا جس میں انہوں نے اپنے حلقے مردان این اے 22 کو درپیش مسائل اور اس کی ضررویات کا ذکر کیاہے . پاکستان تحریک انصاف کے وزیر مملکت علی محمد خان نے اس خط میں سعودی عرب کی حکومت اور ولی عہد محمد بن سلمان سے اپنے حلقے کے مسائل حل کرنے کیلئے فنڈز کی صورت میں مدد مانگ لی ہے . علی محمد خان نے ٹویٹر پر جاری اپنے پیغام میں لکھا کہ ” آج سعودی سفیر جناب نوا ف بن سعید احمد المالکی صاحب سے ملاقات ہوئی اور ان سے اپنے

حلقے این اے 22 میں کچھ ضروری کاموں کے سلسلے میں برادر سعودی حکومت اور ولی عہد جناب محمد بن سلمان سے تعاون کی درخواست کی ہے اور انشاءاللہ امید ہے کہ اللہ بہت کرم کرے گا اور این اے 22 پاکستان کا ماڈل حلقہ بنے گا . “ علی محمد نے سعودی سفیر نواف بن سعد المکی کو لکھے گئے خط میں کہا کہ ” میں سعودی سفیر کا مجھے وقت دینے ،میرے حلقے کو درپیش مسائل پر مشاورت کرنے ، اپنے اورولی عہد کی سے تعاون کی یقین دہانی کروانے پر آپ کا مشکور ہوں . میں آپ کے سامنے میرے حلقے این اے 22 میں مطلوبہ چیزوں کی ایک فہرست پیش کرنے جارہاہوں ، مجھے امید ہے کہ آپ کی اور سعودی عرب کے ولی عہد کی جانب سے بھر پور تعاون کیا جائے گا . خط میں 13 چیزوں کیلئے سعودی عرب سے مدد مانگی گئی ہے جس میں سب سے پہلے نمبر پر این اے 22 کیلئے مدینہ یونیورسٹی کی طرز کی انٹرنیشنل اسلامک وویمن یونیورسٹی ہے ، دوسرے نمبر پر بین الاقوامی سطح کے تین سو بیڈز پرمشتمل بیڈ شامل ہے . علی محمد خان کا کہناتھا کہ ان کے حلقے کو سڑکوں اور پلوں کی تعمیر کیلئے ایک بلین روپے کی گرانٹ ، سعودی عرب کی مدینہ یونیورسٹی سمیت دیگر اعلی تعلیمی اداروں میں پاکستانی مدرسوں سے گریجو ایٹ ہونے والے نوجوانوں کیلئے سکالر شپ بھی فراہم کی جائے . علی محمد خان نے خط میں اپنے حلقے کے مسائل بیان کرتے ہوئے کہا کہ اس کے علاوہ میرے حلقے کے ہنر مند افراد کیلئے 100 ویزے جاری کیے جائیں ، 30 ایمبولینس اور تین چھوٹے ہسپتال ، 3 ہزار نلکے ، تین سو مساجد کی تعمیر ، 22 یونین کونسلوں میں 30 جنازہ گاہ ، تین ہزار فوڈ پیکجز ، تین ہزار وہییل چیئرز ،

ایک ہزار بچوں کیلئے یتیم خانہ اور تن ہزار سول انر جی پینلز کی ضرورت ہے . علی محمد خان کے اس خط پر ن لیگ کے رہنما شیخ وقاص اکرم میدان میں آئے اور انہوں نے پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ” آپ لوگوں کو ہو کیا گیاہے ، وزیر مملکت سعودی سفیر سے مدد مانگ رہاہے کہ اسے حلقے کیلئے فنڈ فراہم کیے جائیں ، وہ چاہتے ہیں کہ ولی عہد شہزاد محمد بن سلمان انہیں نلکوں ، کھانے ، سڑکوں کیلئے اربوں روپے دیں ، اپنی حکومت سےکہو کہ وہ آپ کی سعودی عرب کی طرف سے ملنے والے چھ بلین ڈالر میں سے کچھ  مدد کریں .

. .

Top